اسرائیلی فوج اور یہودی آباد کاروں کےحملوں میں متعدد فلسطینی زخمی

قابض اسرائیلی فوج نے فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے شمالی شہروں نابلس اور جنین میں متعدد مقامات پر فلسطینیوں پرحملے کیے جس کے نتیجے میں متعدد شہری زخمی ہوگئے۔

فاران: قابض اسرائیلی فوج نے فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے شمالی شہروں نابلس اور جنین میں متعدد مقامات پر فلسطینیوں پرحملے کیے جس کے نتیجے میں متعدد شہری زخمی ہوگئے۔

نابلس کے شمال مغرب میں برقہ نامی گاؤں میں شہریوں کے گھروں پر قابض فوجیوں کی حفاظت میں یہودی آباد کاروں کے حملے کے دوران دو نوجوان زخمی ہوئے اور درجنوں افراد زہریلی گیس سے دم گھٹنے سے متاثر ہوئے۔

شمال مغربی کنارے میں سیٹلمنٹ فائل کے انچارج افسر غسان دغلس نے بتایا کہ آباد کاروں نے برقہ گاؤں کے مغربی حصے میں شہریوں کے گھروں پر حملہ کیا، بھیڑ بکریوں کے لیے ایک بیرک اور اردگرد کی زمینوں میں موجود زیتون کے درختوں کو جلا دیا گیا۔ اس کے علاوہ اس علاقے میں اسرائیلی فوج نے فلسطینیوں پر فائرنگ کی اور ان پر صوتی بم برسائے۔

دغلس نے بتایا کہ قصبے میں اب بھی آباد کاروں اور رہائشیوں کے درمیان تصادم جاری ہے جو ان کا مقابلہ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

سیاق و سباق میں بدھ کی شام جنین کے مغرب میں واقع گاؤں زبوبہ میں اسرائیلی قابض افواج کے ساتھ جھڑپوں کے دوران متعدد شہری زخمی ہوئے۔

ایک مقامی ذریعے نے بتایا: قابض فورسز کے گاؤں پر دھاوا بولنے کے بعد جھڑپیں شروع ہوئیں، اس دوران انہوں نے زہریلی گیس اور صوتی بم برسائے، جس سے متعدد شہری زخمی ہوئے۔

دوسری جانب قابض فوج نے بدھ کو الخلیل میں تلاشی کی کارروائیوں کے دوران متعدد شہریوں کو گرفتار کرلیا۔