اسرائیلی فوج کا وحشیانہ کریک ڈاؤٌن،26فلسطینی گرفتار

اسرائیلی فوج کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ سیکیورٹی فورسز نے غرب اردن میں تلاشی کےدوران متعدد فلسطینیوں کو حراست میں لیا گیا ہے۔
فاران؛ قابض اسرائیلی فوج نے فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے اور مقبوضہ بیت المقدس میں گھر گھر تلاشی کی کارروائیوں کے دوران 26 فلسطینی شہریوں کو حراست میں لے لیا ہے۔ قابض فوج نے تلاشی کی کارروائیوں کے دوران گھروں میں گھس کر توڑپھوڑ، لوٹ مار اور فلسطینیوں کو زدو کوب کیا۔
اسرائیلی فوج کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ سیکیورٹی فورسز نے غرب اردن میں تلاشی کےدوران متعدد فلسطینیوں کو حراست میں لیا گیا ہے۔ ان میں اسرائیلی فوج کو یہودی آباد کاروں پرحملوں میں مطلوب فلسطینی شامل ہیں۔
غرب اردن کے جنوبی شہر الخلیل میں اسرائیلی فوج نے تلاشی کےدوران عبداللہ محمد العواودہ، شاہر غازی الشرحہ، مراد محمود حربیات، محمد ماجد حربیاتم حسین عبدالقادر، ابو ھاشم شوامرہ، ان کا بیٹا اسماعیل، اور دیگر کو دورا، دیر سامت، کریسہ، دیر الدرویش، الفوقا، دیر العسل اور جنوب مغربی الخلیل سے حراست میں لیا گیا۔
الخلیل شہر میں تلاشی کے دوران چار بچوں کے والد حجازی علی الجدع الواقسمہ  جن میں سے ایک گیارہ سالہ بچہ کینسر کا مریض ہے کو بھی حراست میں لے لیا۔
رام اللہ میں البیرہ کے مقام پر تلاشی کےدوران اسرائیلی فوج نے حمدی رمانہ، قسام عابد، مجدی محمد الشیخ، کو حرات میں لے لیا اور ان کے گھروں سے ایک لاکھ شیکل کی رقم بھی لوٹ لی گئی۔
رام اللہ کے شمال میں کفر عین کے م قام پرتلاشی کےدوران 19 سالہ احمد خلیل ابو خرمہ کو گرفتار یا۔
نابلس سے دو فلسطینیوں قصورہ عسعوس اور حکم منصور کی گرفتاری عمل میں لائی گئی۔
شمالی شہر سلفیت سے صہیب شقور، عبدالقادر شقور اور عمید شقورکو گرتار کیا گیا۔
جنین سےعبدالکریم ابو فرحہ کو گرفتار کیا گیا۔ بیت لحم سے اسماعیل العرج کی گرفتاری عمل میں لائی گئی۔