اسرائیلی پارلیمنٹ تحلیل کرنے کے لیے بینیٹ اور لاپڈ کا اتفاق/ اسرائیل کی اتحادی کابینہ بکھرنے کے دہانے پر، پانچویں مرتبہ ہوں انتخابات

اسرائیل کے وزیر اعظم اور وزیر خارجہ نے پارلیمنٹ (Knesset ) کو تحلیل کرنے اور مقبوضہ فلسطین میں قبل از وقت انتخابات کرانے پر اتفاق کیا ہے۔

فاران: وزیر اعظم نفتالی بینیٹ اور اسرائیلی وزیر خارجہ یائر لاپڈ نے کنیسٹ (پارلیمنٹ) کو تحلیل کرنے اور قبل از وقت انتخابات کرانے پر اتفاق کیا ہے۔

ہاآرٹض کی رپورٹ کے مطابق نفتالی بینیٹ اور یائر لاپڈ نے اگلے ہفتے کنیسٹ کو تحلیل کرنے پر ووٹ دینے پر اتفاق کیا ہے۔ ووٹنگ کی منظوری کی صورت میں لاپڈ اسرائیل کے اگلے عبوری وزیر اعظم ہوں گے۔

اسرائیلی وزیر اعظم اور وزیر خارجہ نے ایک مشترکہ بیان میں کہا کہ انہوں نے ایک سال قبل بننے والے اپنے اتحاد کو مستحکم کرنے کے لیے تمام ذرائع آزمائے ہیں۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ “اتحاد کو مستحکم کرنے کے لیے تمام کوششوں کے بعد، نفتالی بینیٹ اور یائر لاپڈ نے اگلے ہفتے کنیسٹ کو تحلیل کرنے کا منصوبہ پیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ منظوری کے بعد، [وزیراعظم کا] روٹیشن پلان باری باری نافذ کیا جائے گا۔”

صیہونی ٹیلی ویژن نے یہ بھی اطلاع دی ہے کہ دونوں فریقوں نے کنیسٹ کو تحلیل کرنے اور لاپڈ کو وزیر اعظم مقرر کرنے پر اتفاق کیا ہے۔

خیال رہے کہ مقبوضہ فلسطین میں ساڑھے تین سال کے عرصے میں یہ پانچواں الیکشن ہو گا۔ نئے انتخابات 25 اکتوبر کو ہونے والے ہیں۔