اسرائیل کا یروشلم میں 20 ہزار فلسطینی گھر تباہ کرنے کا منصوبہ

فادی الحمدائی نے اتوار کو ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں بیت المقدس اور مسجد اقصیٰ پر ایک سمپوزیم میں شرکت کے موقع پر اس منصوبے کا اعلان کیا۔

فاران: یروشلم افئیرز کے وزیر فادی الحمدائی نے کہا ہے کہ شہر کے 20 ہزار گھروں کو مسمار کرنا ہے۔ اسرائیلی میونسپلٹی کا منصوبہ بتاتے ہوئے انہوں نے کہا ہے کہ گزشتہ برس میں فلسطینیوں کے 500 ہائوسنگ یونٹس پہلے ہی مسمار کیے جا چکے ہیں۔

فادی الحمدائی نے اتوار کو ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں بیت المقدس اور مسجد اقصیٰ پر ایک سمپوزیم میں شرکت کے موقع پر اس منصوبے کا اعلان کیا۔ فلسطینی حکام نے واضح کیا ہے کہ اسرائیل حالیہ برسوں میں فلسطینی گھروں کے متعدد پراجیکٹس گرا چکا ہے۔ اس کا مقصد ہے کہ یہاں یہودی بستیوں کی تعمیر و توسیع کی جائے۔ اب اس کام میں تیزی لائی جارہی ہے تاکہ گریٹر یروشلم پلان مکمل ہو سکے۔

فلسطینی افسر نے میونسپلٹی پر یہ الزام بھی لگایا ہے کہ مقبوضہ مشرقی بیت المقدس میں فلسطینیوں کو مجبور کیا جارہا ہے کہ وہ اپنے گھروں کو خود ہی گرا دیں۔