غاصب فوجیوں کے ہاتھوں 12 گھنٹے میں دوسرے فلسطینی کی شہادت

بدھ کی رات اور جمعرات کی صبح غاصب صیہونی فوجیوں کی فائرنگ میں کم سے کم دو فلسطینی شہید اور متعدد زخمی ہوگئے ۔

فاران: عرب اڑتالیس کی رپورٹ کے مطابق غرب اردن کے شہر بیت لحم کے الدہیشہ کیمپ پر غاصب صیہونی حکومت کے فوجیوں کے حملے میں ایک فلسطینی شہید ہو گیا۔ شہید ہونے والے فلسطینی کا نام ایمن محسن بتایا گیا ہے جو حال ہی میں صیہونی جیل سے رہا ہوئے تھے۔

صیہونی فوجیوں نے ان کے سینے میں گولی ماری جس سے وہ زخمی ہو گئے اور پھر زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے شہید ہو گئے۔

صیہونی فوجیوں کے اس حملے میں ایک اور فلسطینی کے پیر میں گولی لگی جبکہ کئی دیگر فلسطینیوں کو صیہونی فوجیوں نے گرفتار بھی کر لیا۔

بدھ کی رات بھی جنین کے مغرب میں واقع یعبد کے علاقے میں صیہونی فوجیوں کی وحشیانہ جارحیت میں بلال عوض توفیق کبہا نامی فلسطینی نوجوان شہید ہو گیا تھا ۔ اس جارحیت میں چھے دیگر فلسطینی نوجوان زخمی بھی ہوئے۔

فلسطینی ذرائع‏ کی رپورٹ کے مطابق غاصب صیہونی حکومت کے سیکڑوں فوجیوں نے بنی براک مزاحمتی کارروائی انجام دینے والے فلسطینی شہید ضیا حمارشہ کے مکان کو بم سے اڑانے کی غرض سے یعبد کے علاقے پر حملہ کیا جہاں فلسطینیوں اور صیہونی فوجیوں کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئیں۔

جنین پر بھی صیہونی جارحیت کے دوران فلسطینیوں اور صیہونی فوجیوں کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئیں ۔

غاصب صیہونی حکومت نے انیس مئی کو شہید حمارشہ کا مکان تباہ کئے جانے کے احکامات جاری کئے تھے۔ شہید ضیا حمارشہ نے انتیس مارچ کو بنی براک کے علاقے میں دلیرانہ کارروائی انجام دیتے ہوئے پانچ صیہونیوں کو ہلاک کر دیا تھا جبکہ وہ صیہونی فوجیوں کے ساتھ ہونے والی جھڑپ میں شہید ہو گئے تھے۔

دریں اثنا فلسطینی اتھارٹی کے وزیراعظم نے عالمی برادری کی جانب سے صیہونی حکومت کا بائیکاٹ کئے جانے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ العرب الیوم کی رپورٹ کے مطابق فلسطینی اتھارٹی کے وزیراعظم محمد اشتیہ نے فلسطینی عوام کے خلاف غاصب صیہونی حکومت کے جرائم کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ صیہونی فوجیوں نے فلسطینیوں کا خون بہانے کا تہیہ کر رکھا ہے اور اسی بنا پر روزانہ فلسطینیوں کی شہادت واقع ہو رہی ہے۔

انھوں نے کہا کہ عالمی برادری کو چاہئے کہ صیہونی حکومت کے جرائم کی مذمت کرتے ہوئے اسرائیل کے خلاف سنجیدہ اقدامات عمل میں لائے۔

فلسطینی اتھارٹی کے وزیراعظم محمد اشتیہ نے عالمی برادری کی جانب سے صیہونی حکومت کا بائیکاٹ کئے جانے کی ضرورت پر بھی زور دیا ۔ انھوں نے کہا کہ دنیا کی بیشتر بین الاقوامی تنظیموں اور اداروں نے اپنی رپورٹوں میں صراحت کے ساتھ کہا ہے کہ غاصب صیہونی حکومت ایک نسل پرست حکومت ہے اور نسل پرست حکومت کا خاتمہ ہونا چاہئے۔

فلسطین کے مرکز شماریات نے بھی اپنی حالیہ رپورٹ میں اعلان کیا ہے کہ رواں سال کے آغاز ‎سے تیس اپریل تک پچاس سے زائد فلسطینی غاصب صیہونی حکومت کے فوجیوں کی فائرنگ میں شہید ہوئے ہیں۔