غرب اردن میں نئی یہودی آباد کاری پر یورپی یونین کا اظہار تشویش

یورپی یونین نے یہودی آباد کاروں کی جانب سےغرب اردن میں کالونیاں قائم کرنے کے منصوبے پر اپنی تشویش کا اظہار کیا ہے۔

فاران: یورپی یونین نے مقبوضہ مغربی کنارے میں متعدد نئی چوکیاں قائم کرنے کے لیے آباد کاروں کے منصوبے کے اعلان پر اپنی تشویش کا اظہار کیا۔

یونین نے جمعرات کو ایک بیان میں کہا ہے کہ مغربی کنارے میں 150 غیر قانونی بستیوں کی چوکیاں ہیں اور یہ چوکیاں اکثر اسرائیلی بستیوں کے قیام یا توسیع کا حصہ ہیں۔ یہ آباد کاروں کا ممکنہ براہ راست فلسطینیوں پر تشدد کا ذریعہ ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہودی بستیاں اور چوکیاں بین الاقوامی قانون کے تحت غیر قانونی ہیں، اور بیان کے مطابق “دو ریاستی حل” کے حصول میں ایک بڑی رکاوٹ ہیں۔