غزہ میں “نسل کشی” کے خلاف یورپی شہروں میں بڑے پیمانے پر مظاہرے

فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی پر اسرائیلی ریاست کی طرف سے مسلط کی گئی نسل کشی اور جنگی جرائم کی وحشیانہ جنگ کے خلاف جہاں عالمی حکمران خاموش تماشائی ہیں وہیں عالمی عوام کا ضمیر زندہ اور بیدار ہے جو مظلوم فلسطینی عوام کی حمایت میں جلسے جلوس اور ریلیاں نکال رہے ہیں۔

فاران: فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی پر اسرائیلی ریاست کی طرف سے مسلط کی گئی نسل کشی اور جنگی جرائم کی وحشیانہ جنگ کے خلاف جہاں عالمی حکمران خاموش تماشائی ہیں وہیں عالمی عوام کا ضمیر زندہ اور بیدار ہے جو مظلوم فلسطینی عوام کی حمایت میں جلسے جلوس اور ریلیاں نکال رہے ہیں۔

 

گذشتہ روز بہت سے یورپی دارالحکومتوں اور شہروں میں غزہ کی پٹی پر اسرائیلی جارحیت کے خلاف احتجاجی مظاہرے ہوئے جن میں شرکاء نے جنگ کو فوری طور پر ختم کرنے کا مطالبہ کیا۔

 

جرمن دارالحکومت برلن میں انسانی حقوق کی تنظیموں اور دوسرے شہروں کے مظاہرین کی شرکت کے ساتھ 3 بڑے مظاہرے دیکھنے میں آئے، جس سے اسے “قومی مارچ” قرار دیا گیا۔

 

مظاہروں کا بنیادی نعرہ غزہ میں جنگ بندی کا مطالبہ تھا۔مظاہرین نے اسرائیل کی حمایت اور مدد کرنے والی تنظیموں کے خلاف بھی شدید نعرے بازی کی۔

 

پیرس میں ایک زبردست مظاہرہ پلیس ڈی لا ریپبلک سے شروع ہوا اور پلیس ڈی لا نیشن کی طرف ایک جلوس کی شکل میں گیا۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ فرانسیسی ٹریڈ یونینوں اور سول ایسوسی ایشنز کی طرف سے بلائے گئے مظاہرے کا نعرہ انتہائی دائیں بازو اور فسطائیت کے خلاف لڑنا تھا۔

 

مظاہرے میں غزہ پر اسرائیلی جنگ بند کرنے، فلسطینیوں کا قتل عام روکنے، غزہ کا محاصرہ ختم کرنے اور انسانی امداد پہنچانے کے نعرے بھی لگائے گئے۔مظاہرین نے فلسطینی پرچم اٹھا رکھے تھے اور وہ فلسطین زندہ باد کے نعرے لگا رہے تھے۔

 

برطانیہ کے دارالحکومت لندن میں الجزیرہ کے نمائندے نے بتایا کہ گذشتہ روز 34 شہروں میں فلسطین کے حق میں سرگرمیاں ہو رہی ہیں، جن میں 40 سے زائد مظاہرے بھی شامل ہیں۔

 

ہالینڈ کے شہر یوٹریکٹ میں بھی درجنوں افراد نے غزہ کی پٹی پر اسرائیلی جنگ جاری رکھنے کے خلاف مظاہرہ کیا۔

 

مظاہرین نے فوری طور پر جنگ بندی اور غزہ کی پٹی کے مکینوں کے لیے انسانی امداد کے داخلے کا مطالبہ کرتے ہوئے نعرے لگائے۔

 

یورپ میں بھی ہزاروں افراد نے آسٹریا کے دارالحکومت، سویڈن کے شہر مالمو اور آرہس، ڈنمارک میں مظاہرے کیے۔