فلسطینیوں کی پرامن احتجاجی ریلی پر صہیونی فوج کا حملہ، کئی مظاہرین زخمی

فلسطینی ہلال احمر نے کہا ہے کہ اس کے امدادی کارکنوں نے 22 زخمیوں کو فوری طبی امداد فراہم کی۔ یہ شہری ربڑ کی گولیاں لگنے سے زخمی ہو گئے تھے۔

فاران: منگل کی شام قابض اسرائیلی فوج نے شمالی مقبوضہ مغربی کنارے میں نابلس کے مشرق میں بیت دجن نامی قصبے میں بستیوں کی مذمت میں نکالے جانے والے احتجاجی جلوس پر حملہ کیا جس کے نتیجے میں درجنوں فلسطینی زخمی ہو گئے۔

فلسطینی ہلال احمر نے کہا ہے کہ اس کے امدادی کارکنوں نے 22 زخمیوں کو فوری طبی امداد فراہم کی۔ یہ شہری ربڑ کی گولیاں لگنے سے زخمی ہو گئے تھے۔ اس کے علاوہ 75 فلسطینی مظاہرین زہریلی آنسو گیس کی شیلنگ سے متاثر ہوئے۔

نابلس میں مقامی کمیٹی نے بستیوں اور زمینوں پر لوٹ مار کے خلاف ہفتہ وار مارچ میں شرکت کی اپیل کی تھی۔ بیت دجن گاؤں کئی مہینوں سے قابض افواج کے ساتھ زمینوں پر قبضے کا خطرہ دیکھ رہا ہے۔

گذشتہ جولائی میں مغربی کنارے اور مقبوضہ بیت المقدس میں فلسطینی علاقوں میں اسرائیلی قبضے اور آباد کاروں کے خلاف مزاحمتی کارروائیوں میں اضافہ اور مزید میدانی جھڑپیں دیکھنے میں آئیں۔ مزاحمتی سرگرمیاں مسلح جھڑپوں کے درمیان ابلس اور جنین میں عوامی مزاحمتی کارروائیوں کے جواب میں قابض فوج کے حملے روز کا معمول ہیں۔