فلسطینی پناہ گزینوں کے حق واپسی پر کوئی سمجھوتہ قابل قبول نہیں

فلسطینی پناہ گزینوں کے اپنے آبائی علاقوں میں لوٹنے کے حق پر سمجھوتہ نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا پناہ گزینوں کو کسی دوسری جگہ پر آباد کرنے یا انہیں متبادل وطن اور شہریت دینے کی کوشش کو ہم بھی مسترد کرتے ہیں۔ ''

فاران: حماس کے سیاسی بیورو کے سربراہ اسماعیل ہنیہ نے لبنان کے اہم عرب عمائدین کے ساتھ ملاقات کی ہے۔ ان عرب زعما میں دانشور اور دوسرے شعبوں کی نمایاں شخصیات شامل تھیں۔  اسماعیل ہنیہ آجکل اپنے سیاسی بیورو کے اہم وفد کے ساتھ لبنان کے دورے پر ہیں۔

اسماعیل ہنیہ نے اس ملاقات کے دوران فلسطینی پناہ گزینیوں کے حق واپسی کو کسی بھی طرح چھیننے کی سازش کو مسترد کیا۔ اسماعیل ہنیہ کے دفتر سے جاری کردہ بیان کے مطابق فلسطینی قائد نے دو ٹوک اور بڑے غیر مبہم انداز میں کہا ” فلسطینی پناہ گزینوں کے حق واپسی کی پر اثر انداز ہونے والی کوئی بھی تجویز اور چال قبول نہیں کی جا سکتی ۔”

فلسطینی پناہ گزینوں کے اپنے آبائی علاقوں میں لوٹنے کے حق پر سمجھوتہ نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا پناہ گزینوں کو کسی دوسری جگہ پر آباد کرنے یا انہیں متبادل وطن اور شہریت دینے کی کوشش کو ہم بھی مسترد کرتے ہیں۔ ”

حماس کے سیاسی شعبے کے سربراہ نے عرب زعما کو فلسطین کی تازہ ترین صورت حال سے آگاہ کیا۔ مسجد اقصی کی بے حرمتی کے مسلسل واقعات اور فلسطینیوں کے خلاف مظالم کے بارے میں  بھی تبادلہ خیال کیا۔” نیز انہوں نے بعض عرب ممالک کی طرف سے اسرائیل کے ساتھ تعلقات کو نارملائز کرنے کی اطلاعات اور واقعات سے پیدا شدہ چیلنجوں پر بھی بات کی ۔