فلسطین کے حوالے سے دنیا کا دوہرا معیار ناقابل قبول ہے: عرب پارلیمان

العسومی کا کہنا ہے کہ فلسطینی عوام کے مسئلے پر بین الاقوامی ردعمل اور روسی- یوکرینی بحران کی پیش رفت دوہرے معیار کی واضح مثال ہے۔

فاران: عرب پارلیمنٹ کے اسپیکر عادل العسومی نے مسئلہ فلسطین اور یوکرینی بحران سے نمٹنے کے لیے بین الاقوامی سطح پر دوہرے معیارات پر تنقید کرتے ہوئے بین الاقوامی انصاف کے حصول کے لیے تمام مسائل سے نمٹنے کے لیے متحد عالمی معیارات پر زور دیا۔

العسومی نے بالی انڈونیشیا میں بین الپارلیمانی یونین کی 144ویں اسمبلی سے پہلے اپنی تقریر میں کہا کہ روسی یوکرینی بحران کی موجودہ پیش رفت کی وجہ سے دنیا نے بغاوت کر دی ہے اور یقیناً ہم  کسی ملک پر چڑھائی اور انسانی حقوق کی خلاف ورزی کے حق میں نہیں ہیں۔ کسی بھی ملک کی خودمختاری کو پامال کرنے کی مخالفت کرتے ہیں لیکن ہم اس بات پر زور دینا چاہیں گے کہ فلسطینی عوام وقت کے ساتھ ساتھ انتہائی نفرت انگیز قبضے کا نشانہ بنتے رہے۔  سات دہائیوں سے فلسطینی ریاستی جبر کا شکار ہیں اور دنیا نے انہیں تنہا چھوڑ یا۔

العسومی کا کہنا ہے کہ فلسطینی عوام کے مسئلے پر بین الاقوامی ردعمل اور روسی- یوکرینی بحران کی پیش رفت دوہرے معیار کی واضح مثال ہے جب کہ ان کے مطابق انسانیت کو ہر وقت اورہر جگہ اور تمام لوگوں کے ساتھ ایک ہونا چاہیے۔ .