مراکش نے اسرائیل کے لیے ہفتہ وار پروازوں میں اضافے کی منظوری دے دی

چینل کے مطابق سیاحت کی رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ تقریباً 80 لاکھ اسرائیل  سے باہر بین الاقوامی سیاحتی مقامات کا سفر کرتے ہیں اور اسی لیے مراکش ان میں سے سب سے بڑی تعداد کو اپنی طرف متوجہ کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

فاران: مراکش کے قومی سیاحت کے دفتر نے انکشاف کیا ہے کہ موجودہ سال 2022 کے دوران وہ تل ابیب اور مراکش کے درمیان براہ راست پروازوں کی تعداد بڑھا کر 8 پروازیں فی ہفتہ کر کے تقریباً 200,000 اسرائیلی زائرین کو راغب کرنا چاہتا ہے۔

اسرائیلی چینل کے مطابق i24″  قومی سیاحت کے دفتر کے ایک وفد نے29-30 مارچ کو تل ابیب میں بین الاقوامی بحیرہ روم کے سیاحتی بازار میلے میں شرکت کی اسرائیلی فضائی کمپنی ارکیا کے ساتھ ملاقاتیں کیں جو کہ العال اور یسرائیر کے بعد ہوائی نقل و حمل  کی تیسری اسرائیلی کمپنی ہے۔

چینل کے مطابق سیاحت کی رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ تقریباً 80 لاکھ اسرائیل  سے باہر بین الاقوامی سیاحتی مقامات کا سفر کرتے ہیں اور اسی لیے مراکش ان میں سے سب سے بڑی تعداد کو اپنی طرف متوجہ کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ تقریباً 10 لاکھ مراکشی نژاد اسرائیلی اپنے خاندانوں کی یاد منانے کے خواہشمند ہیں۔

سیاحت کا شعبہ مراکش کی قومی معیشت میں کردار ادا کرنے والے سب سے اہم شعبوں میں سے ایک ہے اور اس شعبے کےاسٹیک ہولڈرز کو امید ہے کہ وہ کرونا وبا کے اثرات اور سرحدوں کو بند کرنے کے فیصلوں سے جلد نکل آئیں گے۔