مغربی کنارے اور القدس میں 24 گھنٹوں میں 15 مزاحمتی کارروائیاں

مغربی کنارے اور مقبوضہ بیت المقدس کے الگ الگ علاقوں میں قابض "اسرائیلی" افواج اور آباد کاروں کے خلاف مزاحمتی کارروائیاں جاری ہیں۔

فاران: حریہ نیوز کے مطابق مغربی کنارے اور مقبوضہ بیت المقدس میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران قابض افواج اور آباد کاروں کو نشانہ بناتے ہوئے مزاحمت کی 15 کارروائیاں دیکھنے میں آئیں، جن کے دوران ایک آباد کار اور ایک اسرائیلی فوجی زخمی ہوا۔

مقبوضہ بیت المقدس کے قصبے ابو دیس میں قابض فوج کے ساتھ تصادم کے دوران پتھراؤ سے ایک اسرائیلی فوجی زخمی ہو گیا اور نوجوانوں نے قابض فوجیوں پر پٹرول بم پھینکے۔

رام اللہ کے مغرب میں واقع شقبا گاؤں کے قریب پتھروں سے ایک اسرائیلی آبادکار زخمی ہو گیا۔

باغی نوجوانوں نے قابض فوج کو پٹرول بموں سے نشانہ بنایا اور مقبوضہ بیت المقدس کے قصبے عیساویہ اور شعفاط پناہ گزین کیمپ میں ہونے والی جھڑپوں کے دوران پتھراؤ کیا۔

نابلس میں حوارہ فوجی چوکی پر قابض فوج کے ساتھ جھڑپیں ہوئیں، اس دوران نوجوانوں نے قابض فورسز پر پتھراؤ اور مولوٹوف کاک ٹیل پھینکے۔

نوجوانوں نے سلفیت گورنری میں حارث جنکشن اور وادی کنہ پر آباد کاروں کے حملوں کا سامنا کیا، جس کے دوران تصادم شروع ہوگیا۔

قلقیلیہ کے جنوب مشرق میں واقع قصبے کفر ثلث میں جھڑپیں شروع ہوئیں جس دوران نوجوانوں نے قابض فورسز پر پتھراؤ کیا۔