نماز جمعہ میں فلسطینی نمازیوں پر اسرائیل کا ڈرون حملہ

ڈرون طیارے کی مدد سے نمازیوں کو قبلہ اول سے نکالنے کے لیے زہریلی آنسوگیس کا استعمال کیا گیا۔

فاران: جمعہ کے روز اسرائیلی فوج نے مسجد اقصیٰ میں نماز جمعہ کے لیے جمع ہونے والے ہزاروں فلسطینی روزہ داروں پر ڈرون طیاروں سے حملہ کیا جس کے نتیجے میں درجنوں نمازی زخمی ہوگئے اور مسجد کے صحن میں آگ بھڑک اٹھی۔

جمعہ کے روز نماز جمعہ کے اجتماع پر اسرائیلی فوج نے ڈرون کے ذریعے نہتے فلسطینی نمازیوں پرآنسوگیس کی شیلنگ کی۔

ڈرون طیارے کی مدد سے نمازیوں کو قبلہ اول سے نکالنے کے لیے زہریلی آنسوگیس کا استعمال کیا گیا۔

ہلال احمر فلسطین کے مطابق اسرائیلی فوج کی آنسوگیس کی شیلنگ سے زخمی ہونے والے دسیوں نمازیوں کو طبی امداد فراہم کی گئی۔

ہلال احمر کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج کے ڈرون حملے میں زخمی ہونے والے 26 فلسطینیوں کو طبی امداد فراہم کی گئی جب کہ مجموعی طور پر 57 فلسطینی نمازی مسجد اقصیٰ میں زخمی ہوئے۔