نیوجرسی یونیورسٹی سے اسرائیل کے لیے کام کرنے والی کمپنی سے بائیکاٹ کا مطالبہ

ریاست نیو جرسی کی پرنسٹن یونیورسٹی میں پیر کے روز ایک قرارداد پر رائے شماری کی گئی جس میں یونیورسٹی کی انتظامیہ سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ کیٹرپلر کمپنی کا بائیکاٹ کرے۔

فاران: ریاست نیو جرسی کی پرنسٹن یونیورسٹی میں پیر کے روز ایک قرارداد پر رائے شماری کی گئی جس میں یونیورسٹی کی انتظامیہ سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ کیٹرپلر کمپنی کا بائیکاٹ کرے، کیونکہ یہ کمپنی اسرائیل کو فلسطینی عوام کے خلاف جرائم کے ارتکاب کے لیے استعمال ہونے والے آلات اور گاڑیاں” فراہم کرتی ہے۔

یونیورسٹی کے طلباء کی جانب رائے شماری اگلے بدھ تک جاری رہے گی۔اس دوران وہ فیصلہ کریں گے اگر پرنسٹن یونیورسٹی کو “امریکی کمپنی کیٹرپلر کے تیار کردہ تعمیراتی آلات کا استعمال بند کر دینا چاہیے، کیونکہ یہ قابض اسرائیل کو فلسطینی عوام پر ظلم کرنے کے لیے استعمال ہونے والے آلات فراہم کرتی ہے۔

یونیورسٹی کے طلبا نے گذشتہ مارچ میں ایک ریفرنڈم کا انعقاد کیا تھا کہ آیا “پرنسٹن کے انڈرگریجویٹ طلباء کو یونیورسٹی سے کیمپس کے جاری تعمیراتی منصوبوں پر کیٹرپلر کے تمام آلات کا استعمال فوری طور پر بند کرنے کا مطالبہ کرنا چاہیے، کیونکہ اس کے آلات کو فلسطینیوں کے مکانات کی  مسماری اور تشدد کی کارروائیوں میں استعمال کیا جاتا ہے۔