کویت کا فلسطینی لیبرکے لیے بین الاقوامی فنڈ کے قیام کا مطالبہ

کویت کی سرکاری خبر رساں ایجنسی’ کونوا‘ نے الموسیٰ  کے حوالے سے کہا "فلسطین کے محنت کش بھائیوں کے لیے کویتی حمایت فلسطینی عوام کے انتخاب کی حمایت کرتے ہوئے کویت کی ریاست کے مضبوط موقف کی عکاسی کرتی ہے۔

فاران: خلیجی ریاست کویت میں افرادی قوت کے لیے عوامی اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل احمد الموسٰی نے قابض اسرائیلی ریاست کی طرف سے فلسطینی مزدروں اور محنت کشوں پر عاید کی جانے والی پابندیوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

انٹرنیشنل لیبر آرگنائزیشن (اقوام متحدہ کی ایک تنظیم) نے “یوم فلسطین” کے نام سے ایک سیشن کا اہتمام کیا۔ یہ عرب لیبر آرگنائزیشن کے تعاون سے 30 مئی سے 11 جون تک جاری رہنے والی بین الاقوامی لیبر کانفرنس کے فریم ورک کا حصہ ہے۔

کویت کی سرکاری خبر رساں ایجنسی’ کونوا‘ نے الموسیٰ  کے حوالے سے کہا “فلسطین کے محنت کش بھائیوں کے لیے کویتی حمایت فلسطینی عوام کے انتخاب کی حمایت کرتے ہوئے کویت کی ریاست کے مضبوط موقف کی عکاسی کرتی ہے۔

انہوں نے نشاندہی کی کہ یہ سیشن اسرائیلی خلاف ورزیوں اور فلسطینی عوام پر ان کے معاشی اور سماجی اثرات، فلسطینی مزدوروں کی مدد کے لیے بین الاقوامی فنڈ کے قیام کی اہمیت اور ترقی اور اسرائیل کی وجہ سے پیدا ہونے والے بحرانوں سے نمٹنے میں اس کے اہم کردار کو پیش کرنے سے بھرپور کوشش ہے۔

فلسطین سینٹر فار پریزنر اسٹڈیز نے تصدیق کی ہے کہ مئی کے مہینے کے دوران قابض حکام نے فلسطینیوں کے خلاف بدسلوکی اور گرفتاریوں کی مہم میں اضافہ جاری رکھا۔