یمن کے سرحدی علاقوں پر سعودی اتحاد کی جاری جارحیت

یمنی ذرائع کا کہنا ہے کہ نیا عیسوی سال شروع ہونے کے بعد سے اب تک یمن کے سرحدی علاقوں پر سعودی اتحاد کی جاری جارحیت میں سات عام شہری شہید اور اکیانوے دیگر زخمی ہو چکے ہیں۔

فاران: المسیرہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق یمنی ذرائع نے اعلان کیا ہے کہ رواں عیسوی سال شروع ہونے کے بعد سے یمن کے سرحدی علاقے خاصطور سے صعدہ کے مختلف علاقے سعودی اتحاد کی جارحیت کا مسلسل نشانہ بنتے رہے ہیں جس میں سات عام شہری شہید اور اکیانوے دیگر زخمی ہو چکے ہیں۔

یمن میں جانی نقصان کا یہ سلسلہ ایسی حالت میں جاری ہے کہ سعودی وزیر خارجہ نے چار روز قبل ڈاووس اجلاس میں کہا تھا کہ یمن کا مسئلہ مذاکرات سے ہی حل ہو سکتا ہے اور ہم مذاکرات کے لئے جنگ بندی کی کوشش کر رہے ہیں۔

اقوام متحدہ کی کوششوں اور یمن کی نیشنل سالویشن حکومت کی رضامندی سے یمن میں دوماہ کی جنگ بندی کا قیام عمل میں آیا تھا جس میں دو بار مدت کی توسیع بھی کی گئی مگر پھر یہ جنگ بندی کسی نتیجے کے بغیر ختم ہو گئی جبکہ یمن کی نیشنل سالویشن حکومت نے نئی جنگ بندی کے لئے صنعا ایرپورٹ مکمل طور پر کھولنے اور سعودی اتحاد کے زیر قبضہ علاقوں کے تیل کی آمدنی سے یمنی ملازمین کو تنخواہیں ادا کئے جانے کی شرط عائد کی ہے۔