یہودی آبادکاروں کا مسجد پر حملہ، مینارے پر لہرا دیا اسرائیلی جھنڈا

کل جُمعہ کی صبح یہودی آباد کاروں نے بیت لحم کے مشرق میں واقع کیسان گاؤں کی ایک مسجد پر اسرائیلی ریاست  کا جھنڈا لہرا دیا۔

فاران: مقامی ذرائع نے اطلاع دی ہے کہ یہودی آباد کاروں کے ایک گروپ نے کیسان گاؤں کی مسجد پر حملہ کرنے کی کوشش کی اور اس کے مرکزی دروازے پر توڑ پھوڑ کی۔ پھر مسجد کی چھت پر چڑھ گئے اور مسجد کے مینارے پر اسرائیلی جھنڈا لہرا دیا۔

کیسان گاؤں کو قابض افواج کے تحفظ میں آباد کاروں کے بار بار حملوں کا نشانہ بنایا جاتا ہے، کیونکہ وہ کسانوں اور چرواہوں پر حملہ کرتے ہیں، شہریوں کو ان کی زمینوں تک رسائی سے روکتے ہیں اور اس کے بڑے علاقوں پر قبضہ کرتے ہیں۔

اس کے علاوہ حملہ آوروں نے قابض فوج کی حفاظت میں نابلس کے شمال مشرق میں واقع الباذان گاؤں پر جمعہ کی صبح دھاوا بول دیا۔

مقامی ذرائع کے مطابق آباد کاروں کی پانچ بسوں نے قابض فوج کے ہمراہ راس النبی کے علاقے پر دھاوا بول دیا جہاں یہ بسیں وادی اردن میں حمرہ فوجی چوکی سے آئی تھیں اور آباد کار نکلنے سے قبل تقریباً دو گھنٹے تک علاقے میں موجود رہے۔