کل 4094 آج 0
  • مطابق با: Thursday - 20 - June - 2024
  • غزہ میں جنگ بندی کی امریکی کوشش کے پس پردہ حقائق

    غزہ میں جنگ بندی کی امریکی کوشش کے پس پردہ حقائق

    یہ جنگ اس وقت تک نہیں رکے گی جب تک غزہ کی پٹی میں فلسطینیوں کی نسل کشی نہیں رک جاتی۔ یہ حالات امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلینکن کے آٹھویں دورہ مقبوضہ فلسطین کی بڑی وجہ ہیں جو عرب ممالک خاص طور پر مصر اور قطر کی ثالثی میں غزہ میں جنگ بندی کی امید پر انجام پایا ہے۔

    14 - ژوئن - 2024

    غزہ میں جنگ بندی کی امریکی کوشش کے پس پردہ حقائق

    یہ جنگ اس وقت تک نہیں رکے گی جب تک غزہ کی پٹی میں فلسطینیوں کی نسل کشی نہیں رک جاتی۔ یہ حالات امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلینکن کے آٹھویں دورہ مقبوضہ فلسطین کی بڑی وجہ ہیں جو عرب ممالک خاص طور پر مصر اور قطر کی ثالثی میں غزہ میں جنگ بندی کی امید پر انجام پایا ہے۔

    تازہ ترین مضامین

    فلم بھولبلییوں میں دوڑنے والا (The Maze Runner) ایک حیران کن مغربی تفکر

    فلم بھولبلییوں میں دوڑنے والا (The Maze Runner) ایک حیران کن مغربی تفکر

    یہ فلم در حقیقت مغربی زندگی کی حیراں و سرگرداں بھوبلییوں کی عکاسی کرتی ہے کہ جہاں پر ہزار طرح کے پیچ و خم رکھنے والے راستے سے گزرنے کے بعد بھی انسان ایک بڑے بھولبلییاں میں داخل ہو جاتا ہے کہ جس سے نہ صرف اس کو نجات نہیں ملتی بلکہ اس کی پریشانیوں میں مزید اضافہ ہو جاتا ہے۔

    امریکی فلم (Beauty and the Beast) پر تنقیدی نظر

    امریکی فلم (Beauty and the Beast) پر تنقیدی نظر

    مغربی طرز زندگی ہمیشہ اس بات کی کوشش میں ہے کہ لوگوں کو زندگی کی مشکلات اور سختیاں برداشت کرنے کے بجائے انہیں مشکلات کو نظر انداز کر کے جینا سکھائے۔ در حقیقت خود پرستی اور اخلاقی فقر، اجتماعی زندگی کی وہ مشکلات ہیں جو ڈسنی کمپنی کی فملوں میں نمایاں نظر آتی ہیں۔

    عاشوراء کی تاریخ میں تحریف کا مقصد یہودی کردار کی پردہ داری

    عاشوراء کی تاریخ میں تحریف کا مقصد یہودی کردار کی پردہ داری

    مروی ہے کہ حضرت محمد(ص) کی ولادت کے بعد، ایک روز ایک یہودی عالم دارالندوہ میں حاضر ہوا اور حاضرین سے پوچھا کہ “کیا آج رات تمہارے ہاں کسی فرزند کی ولادت ہوئی ہے؟”، سب نے نفی میں جواب دیا۔ کہنے لگا کہ اگر نہیں ہوئی ہے تو فلسطین میں ہوئی ہوگی، ایک لڑکا جس کا نام “احمد” ہے۔۔۔

    ذبح اسماعیل(ع) سے ذبح عظیم تک یہودی ریشہ دوانیاں

    ذبح اسماعیل(ع) سے ذبح عظیم تک یہودی ریشہ دوانیاں

    ذبح اسماعیل(ع) کا واقعہ گذشتہ اور موجودہ حالات کی شناخت کے سلسلے کا کلیدی نکتہ ہے لیکن یہود نے اس الہی منصوبے کو منحرف کرکے ذبح اسماعیل کو ذبح اسحاق(ع) کے عنوان سے پیش کیا۔

    وہابیت کی جڑ یہودیت ہے!

    وہابیت کی جڑ یہودیت ہے!

    آج وہابیت اور تکفیریت کے عمائدین جانتے ہوئے اور عام وہابی اور تکفیری دہشت گرد نہ جانتے ہوئے، اسلام کے پیکر پر مہلک وار کررہے ہیں، اور ان کے لئے مسلمانوں کا مفاد نہ صرف عزیز نہیں ہے بلکہ یہودیوں کے ساتھ مل کر مسلمانوں کے مفادات کو نقصان پہنچانا، اپنا مشن سمجھتے ہیں۔

    یہودیت اور وہابیت کے درمیان شباہتیں

    یہودیت اور وہابیت کے درمیان شباہتیں

    وہابیت کا اصول مسلمانوں کی تکفیر اور مسلمانوں کو للکارنے پر استوار ہے اور اس کی تمام تر کوشش یہ ہے کہ مسلمانوں کو ایک دوسرے کے خلاف صف آرا کیا جائے، عالم اسلام کا چہرہ مخدوش اور داغ دار کیا جائے، دہشت گردی کو فروغ دیا جائے۔

    یوم القدس، ظلم کے خلاف اتحاد کا مظاہرہ

    یوم القدس، ظلم کے خلاف اتحاد کا مظاہرہ

    دراصل غور طلب بات یہ ہے کہ آج جو فلسطین کے مسلمانوں پر اسرائیل ظلم کر رہا ہے، وہی ظلم النصره و داعش شام اور عراق کے مسلمانوں پر بھی کر رہی ہیں۔ یہ نام نهاد جہادی گروپ دراصل اسرائیل اور استعمار کے مقاصد کو پورا کرنے کے لئے بنائے گئے ہیں۔

    عالمی یوم القدس کی اہمیت

    عالمی یوم القدس کی اہمیت

    یوم قدس مختلف زاویوں سے اہمیت کا حامل ہے، منجملہ یہ کہ اس سے غاصب اسرائیلی حکومت کے ناجائز وجود کی عالمی سطح پر مخالفت ہوتی ہے۔ یہی یوم قدس صہیونی حکومت پر دباو کی علامت ہے ۔

    انٹرویو

    اسلامی ممالک امت کے دفاع کے لئے مشترکہ فوج تشکیل دیں۔۔۔ ایڈمرل تنگسیری

    اسلامی ممالک امت کے دفاع کے لئے مشترکہ فوج تشکیل دیں۔۔۔ ایڈمرل تنگسیری

    یقینا اگر اسلامی اتحاد کے ہدف کو حاصل کر سکے ہوتے تو اپنی دولت اپنے ملکوں اور علاقے کی تعمیر و ترقی پر خرچ کرتے، اور اب سوال یہ ہے کہ اگر ہم اس مرحلے تک پہنچے ہوتے تو کیا ہوتا؟ مغربیوں اور ان کی آمدنیوں کا کیا بنتا؟ اور وہ جو اپنی بقاء کے لئے جنگوں کے محتاج ہیں، تو ان کی بقاء کی ضمانت کیونکر دی جاسکتی تھی؟

    کیا کالعدم جیش العدل پاکستان میں مقیم نہیں ہے؟ کیا یہ ٹولہ پاکستانی مفادات پر حملے نہيں کرتا؟

    کیا کالعدم جیش العدل پاکستان میں مقیم نہیں ہے؟ کیا یہ ٹولہ پاکستانی مفادات پر حملے نہيں کرتا؟

    یہ پہلا موقع نہیں ہے جب پاک ایران سرحدی علاقہ غیر مستحکم صورتحال سے دوچار ہے بلکہ ماضی میں بھی اسے تناؤ کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ ماضی کے چند واقعات کا خلاصہ، جن کی وجہ سے دونوں برادر ممالک کے درمیان سفارتی تعلقات کشیدہ ہوگئے

    غزہ پر جارحیت کے آغاز سے لے کر اب تک امریکیوں کے پیغامات وصول کرتے رہے ہیں/ مغربی ممالک نے 28 مرتبہ حزب اللہ کے پیغامات دیئے ہیں/ فلسطینی عوام ہی غزہ اور فلسطین کے مستقبل کا تعین کریں گے: امیرعبداللٰہیان
    طوفان الاقصٰی؛

    غزہ پر جارحیت کے آغاز سے لے کر اب تک امریکیوں کے پیغامات وصول کرتے رہے ہیں/ مغربی ممالک نے 28 مرتبہ حزب اللہ کے پیغامات دیئے ہیں/ فلسطینی عوام ہی غزہ اور فلسطین کے مستقبل کا تعین کریں گے: امیرعبداللٰہیان

    اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے کہا: حالیہ چھ ہفتوں کے دوران امریکہ سے ـ بالخصوص تہران میں سوئس سفارتخانے کے ذریعے ـ متعدد پیغامات موصول ہوئے ہیں / وہ 2006 ميں حزب اللہ کا خاتمہ چاہتے تھے لیکن آج حزب اللہ کو جنگ کے پھیلاؤ کا سد باب کرنے کے لئے پیغامات ارسال کر رہے ہیں۔

    غزہ کے مظلوموں کی پکار

    غزہ کے مظلوموں کی پکار

    ہسپتال لاشوں سے بھرے پڑے ہیں اور زخمی جنہیں علاج کی ضرورت ہے، ان کے علاج کے لیے مزید بستر نہیں ہیں، سینکڑوں چھوٹے بچے جنہوں نے ان حملوں کے دوران اپنے والدین کو کھو دیا ہے، ان کی دیکھ بھال کی اشد ضرورت ہے۔ ان تمام جرائم کے باوجود جو ان کے خلاف ہو رہے ہیں، غزہ کے باشندوں نے بارہا اعلان کیا ہے کہ وہ کبھی بھی اپنا وطن چھوڑنے کے لیے تیار نہیں ہیں، ان کا اصرار ہے کہ وہ ماضی کی غلطی کو نہیں دہرانا چاہتے۔

    کیا صہیونی حکومت اپنی بالادستی اور تسدید قوت کھو چکی ہے؟

    کیا صہیونی حکومت اپنی بالادستی اور تسدید قوت کھو چکی ہے؟

    مسلم ممالک کی حالیہ پیشرفت اور مسلمانوں کی باہمی قدرت بھی صہیونی ریاست زوال کے اسباب میں سے ایک ہے۔ صہیونی جو کر سکے کر گذرے، تا کہ عرب ممالک کے ساتھ تعلقات قائم کر سکے؛ خطے کے مختلف علاقوں میں بالواسطہ اور بلاواسطہ مداخلت کی۔

    تعارف شخصیات

    ایک بدکردار یہودی فلسفی، ژاں پال سارتر

    ایک بدکردار یہودی فلسفی، ژاں پال سارتر

    ژاں پال سارتر (1) تقریبا تین عشروں تک پیرس کی فلسفی حیات پر مسلط رہا۔ وہ سنہ 1905ع‍ میں پیدا ہؤا، سنہ 1974ع‍ میں بیمار پڑ گیا اور اپنی بصارت کھو گیا؛ لیکن بڑھاپا ہی اس کے جسم کی تحلیل اور شدید بیماری اور سنہ 1980ع‍ میں اس کی موت کا سبب نہ تھا!!

    ملٹن فریڈمان اور نیولبرل آمریت
    یہودی بھنئے؛

    ملٹن فریڈمان اور نیولبرل آمریت

    نو لبرل معیشت ایک قسم کی نو لبرل سیاسی آمریت کی معاشی بنیاد ہے، جو آزادی کے نعرے کے پیچھے چھپ کر رہتی ہے۔

    ڈیوڈ مِیدان کون ہے/ موساد کا سابق اہلکار اور خطے میں اسرائیلی دراندازی پر مامور

    ڈیوڈ مِیدان کون ہے/ موساد کا سابق اہلکار اور خطے میں اسرائیلی دراندازی پر مامور

    خطے کے ممالک میں اسرائیل کے نفوذ اور اثر و رسوخ میں ڈیوڈ مِیدان کا کردار اس قدر نمایاں تھا کہ بہت سے لوگ اسے نیتن یاہو کا اصل وزیر خارجہ کا عنوان دیتے تھے۔ بعض ذرائع نے اس کو خطے میں مصروف کار دہشت گردوں کے دادا کا لقب بھی دیا ہے۔

    ماتی کوچاوی کے پاؤں کا نشان سعودی عرب میں بھی!!!
    ماتی کوچاوی کون ہے؟ ۳

    ماتی کوچاوی کے پاؤں کا نشان سعودی عرب میں بھی!!!

    اے جی ٹی اور 4D کے ڈیزائن کردہ سسٹمز نے ٹینڈرز میں جمع کرائے گئے تین ابتدائی نمونوں میں سب سے زیادہ پوائنٹس حاصل کئے؛ لیکن اس کے باوجود یہ منصوبہ بظاہر انہيں سپرد نہیں کیا گیا۔

    ماتی کوچاوی کون ہے؟

    ماتی کوچاوی کون ہے؟

    عالمی سطح پر جدید سیکورٹی-انٹیلی جنس نظام کی تشکیل کے سالوں کے دوران ماتی کوچاوی نے اپنی توجہ ایسے شعبے پر مرکوز کرلی جس نے 11 ستمبر کے واقعے کے بعد تیزی سے فروغ پایا اور آج یہ شعبہ بڑی اور چھوٹی طاقتوں کے مقابلے کا میدان بن چکا ہے: سائبر اسپیس۔

    تعارف مراکز

    لاجک اینڈ انڈسٹریز: جاسوسی ادارے کے انجنیئر اور سپائی ویئر کی تیاری

    لاجک اینڈ انڈسٹریز: جاسوسی ادارے کے انجنیئر اور سپائی ویئر کی تیاری

    ہ بتانا ضروری ہے کہ یہ تمام اقدامات امارات اور غاصب ریاست کے درمیان تعلقات کے باضابطہ اعلان سے کئی برس پہلے عمل میں لائے گئے ہیں، اور اسی بنا پر کوچاوی وہ پہلا اسرائیلی شخص سمجھا جاتا ہے جس نے خلیج فارس کے علاقے - بطور خاص متحدہ عرب امارات - میں ریشہ دوانی کی ہے اور اپنے لئے مضبوط پوزیشن کا انتظام کیا ہے۔

    حفاظتی سلوشنز کی 4D کمپنی کا قیام
    ماتی کوچاوی کون ہے؟ ۲

    حفاظتی سلوشنز کی 4D کمپنی کا قیام

    ایک سو (100) سے بھی زیادہ ڈاکٹر اور ماہر انجنیئر اس مجموعے کے مشینی امور، مصنوعی ذہانت اور اشیاء کا انٹرنیٹ میں کام کر رہے ہیں؛ اور سینسرز سے حاصل ہونے والی معلومات کے پراسیسنگ اور تجزیئے میں مصروف ہیں تا کہ فزیکی ماحولیات کو قابل فہم بنا دیں۔

    امریکی صہیونی تنظیم (ZOA) کا تعارف

    امریکی صہیونی تنظیم (ZOA) کا تعارف

    امریکی صہیونی تنظیم صرف صہیونی ریاست کے تحفظ کے لیے کام کرتی اور اس راہ میں پائے جانے والی ہر رکاوٹ کو دور کرنے کی کوشش کرتی ہے اس تنظیم کی ایک اہم سرگرمی اسرائیل پر حاکم نظام کی حمایت کے لیے دوسرے ممالک کے حکمرانوں میں نفوذ پیدا کرنا ہے۔

    الخلیل کی ۸ صدیاں پرانی تاریخی مسجد علی البکاء کا تعارف

    الخلیل کی ۸ صدیاں پرانی تاریخی مسجد علی البکاء کا تعارف

    مسجد علی البکاء کی تاریخ ۸ صدیاں پرانی ہے۔ اس کے اطراف میں یہودی کالونیوں کی تعداد میں اضافے کے باوجود آج بھی اس کے گنبد و مینار سے اذان کی صدا گونجتی سنی جا سکتی ہے۔

    یہودی تھنک ٹینک آئی این ایس ایس (INSS) کا تعارف

    یہودی تھنک ٹینک آئی این ایس ایس (INSS) کا تعارف

    ادارہ "آئی این ایس ایس" سلامتی، دہشت گردی اور عسکری امور پر متعدد مقالات اور کتابیں انگریزی اور عبرانی زبانوں میں شائع کرتا ہے۔ ان میں ہی میں سے ایک اہم تحقیقی مقالہ ایران کے میزائل سسٹم کے بارے میں ہے جس کا عنوان "ایران کا میزائل سسٹم: بنیادی تسدیدی اوزار" ہے۔

    تعارف کتب

    جو کچھ اسرائیلی امریکی یہودیوں کے بارے میں سوچتے ہیں

    جو کچھ اسرائیلی امریکی یہودیوں کے بارے میں سوچتے ہیں

    جو چیز قارئین کو اس کتاب کے مطالعہ کے لیے ترغیب دلاتی ہے وہ یہ ہے کہ “میٹی گولن” ایک متعصب اسرائیلی یہودی ہے اور اس کے برخلاف جو اکثر لوگ تصور کرتے ہیں کہ امریکہ اور اسرائیل کے یہودیوں کے باہمی تعلقات بہت اچھے ہیں یا دوسرے لفظوں میں ان ملکوں کے روابط جیسا کہ میڈیا دکھاتا ہے اندرونی طور پر بھی ویسے ہی دوستانہ ہیں، اس کتاب میں ان کے درمیان پائی جانے والی دراڑوں سے پردہ ہٹایا گیا ہے۔

    کتاب “یاسر عرفات مجاہدت سے مذاکرات تک” کا تعارف

    کتاب “یاسر عرفات مجاہدت سے مذاکرات تک” کا تعارف

    یاسر عرفات اس کے باوجود کہ ایک فعال، ایکٹو اور فلسطینی مقاصد کے تئیں جذباتی شخص تھے، ایک مغرور سیاست دان اور اپنے گرد و نواح میں رہنے والوں کے اوپر بھرسہ نہ کرنے والے شخص بھی تھے۔ التبہ ان کی یہ خصوصیات کسی حد تک فلسطینی مقاصد کی راہ میں کی جانی والی مجاہدت میں اخلاص کے منافی تھیں۔

    کتاب “22 روزہ جنگ” کا تعارف

    کتاب “22 روزہ جنگ” کا تعارف

    کتاب کا مقدمہ جنگ کے کلی پہلووں جیسے صہیونی حکومت کی جنایت و تعدی، صہیونی ظلم و جنایت کا بین الاقوامی انعکاس ،غزہ کی پائداری و مزاحمت اور مظلومیت وغیرہ کو بیان کر رہا ہے ۔

    تعارف کتاب “اسرائیل کی سوق الجیشی اہمیت اور اسکے اطراف و اکناف کا جائزہ”

    تعارف کتاب “اسرائیل کی سوق الجیشی اہمیت اور اسکے اطراف و اکناف کا جائزہ”

    یہ قیمتی کتاب، ایک مقدمہ، ایک پیش لفظ اور کلی عناوین کے تحت سات فصلوں پر مشتمل ہے، مصنف نے اسی طرح کتاب کے اختتام میں ضمیمہ کے عنوان سے ایک حصہ مخصوص کیا ہے جس میں اسرائیل کی موساد اور ایرانی شہنشاہیت کی خفیہ ایجنسی ساواک کے درمیان خفیہ اطلاعات، سیاسی اور اقتصادی مشترکہ تعاون کو بیان کیا گیا ہے ۔

    کتاب ‘یہودی قوم کیسے بنی؟’ کا تعارف

    کتاب ‘یہودی قوم کیسے بنی؟’ کا تعارف

    یہ کتاب تاریخ کے بارے میں ایک کاوش ہے، جس کا آغاز چند ذاتی داستانوں سے ہوتا ہے۔ مصنف اس کتاب کی سطور میں پہلی صدی عیسوی میں رومیوں کے ہاتھوں یہودیوں کی جبری جلاوطنی کے افسانے پر بطلان کی لکیر کھینچے ہیں اور کہتے ہیں کہ موجودہ زمانے کے یہودی ان نومذہب یہودیوں کی اولاد میں سے ہیں جن کی جنم بومیاں مشرق وسطی اور مشرقی یورپ میں پھیلی ہوئی ہیں۔

    مسلم دنیا

    فلسطینی مزاحمت کو امام خمینی ؒنے زندہ کیا

    فلسطینی مزاحمت کو امام خمینی ؒنے زندہ کیا

    امام خمینی ؒ کی فکر جہاں مزاحمتی تحریکوں کی طاقت کا باعث بن رہی ہے، وہاں عوامی بیداری میں بھی امام خمینی ؒ کی وہی فکر کارفرما ہے، جو انہوں نے ہمیشہ بیان کی اور اس پر عمل کیا۔ لہذا یہ کہنا درست ہے کہ امام خمینی ؒ ایک ایسی عظیم ہستی ہیں کہ جنہوں نے فلسطینی مزاحمت کو پیدا کیا، زندہ کیا اور جلا بخشی۔

    غزہ، جنگ بندی مذاکرات کی تازہ ترین صورتحال

    غزہ، جنگ بندی مذاکرات کی تازہ ترین صورتحال

    ایسے وقت جب غاصب صیہونی رژیم بدستور مذاکرات میں واپسی کے دعوے کر رہی ہے اور گذشتہ روز عبری ذرائع ابلاغ بھی اس بات کا اعلان کر چکے ہیں کہ اسرائیل نے قیدیوں کے تبادلے سے متعلق اپنی نئی تجاویز ثالثی کرنے والے ممالک مصر اور قطر کے سپرد کر دی ہیں۔

    عرب ممالک ایران کے ساتھ مصالحتی حکمت عملی کی طرف کیوں رخ کر رہے ہیں؟

    عرب ممالک ایران کے ساتھ مصالحتی حکمت عملی کی طرف کیوں رخ کر رہے ہیں؟

    ایرانیوں اور عربوں کے درمیان تعلقات کے آغاز کا ایک نیا باب شروع ہوا ہے کیونکہ وہ خطے کے استحکام اور سلامتی کو مستحکم کرنے اور علاقائی معاملات کو تناؤ اور تنازعات میں دھکیلنے سے روکنا چاہتے ہیں۔

    جنوبی لبنان اور غزہ کی پٹی سے پسپائی کا مطلب اسرائیل کی شکست ہے، سید حسن نصر الله

    جنوبی لبنان اور غزہ کی پٹی سے پسپائی کا مطلب اسرائیل کی شکست ہے، سید حسن نصر الله

    یوم القدس کے موقع پر اپنے ایک خطاب میں حزب اللہ کے سربراہ کا کہنا تھا کہ تہران نے امام خمینی رہ کے زمانے سے ہی فلسطین کاز کے ساتھ اپنی وابستگی کا اعلان کیا جس وجہ سے ایران کو بہت زیادہ سازشوں اور دشمن کی جنگوں کا سامنا کرنا پڑا۔

    غزہ: شاباش ایران! خبردار پاکستان، پر ایک تبصرہ

    غزہ: شاباش ایران! خبردار پاکستان، پر ایک تبصرہ

    "ولایت فقیہ یعنی ایران کا سیاسی نظام، نیابت امام ہے اور اپنی جگہ پر ویسے ہی اتھارٹی رکھتا ہے جیسی اتھارٹی امام سے منسوب کی جاتی ہے۔ روایتی تشیع اس کی اب بھی قائل نہیں ہیں۔ مکتب تشیع کیا ہے؟ کا جواب دینے والے اکثر علماء اور مراجع ولایت فقیہ کے قائل نہیں ہیں کیونکہ اس کے ذریعے سے وہ جانتے ہیں کہ ہمارا غیبت مہدی کا عقیدہ مذاق بن جائے گا اور ان کی نظر میں یہ غیبت مہدی کا ایک زاویے سے عملی انکار ہے۔

    غزہ کیلئے جلتا امریکی سپاہی اور عالم اسلام کی خاموشی

    غزہ کیلئے جلتا امریکی سپاہی اور عالم اسلام کی خاموشی

    ہم سو رہے ہیں، ہمارے جذبے استعماری پروپیگنڈے سے ماند پڑ رہے ہیں، مگر اہل فلسطین کے دشمن انسانیت سے نکل چکے ہیں۔ اسرائیلی سیاستدانوں کو تو چھوڑیں، امریکی رکنِ کانگرس اینڈی اوگلز نے کہا ہے کہ غزہ میں تمام فلسطینیوں کو ہلاک کر دینا چاہیئے۔ انا للہ و انا الیہ راجعون۔ امریکی کانگریس کے رکن کی یہ رائے ہے تو آپ اسرائیلی فیصلہ سازوں کے بارے میں بہتر سوچ سکتے ہیں کہ ان کی رائے کیا ہوگی۔؟

    مسئلہ فلسطین اور انقلاب اسلامی ایران

    مسئلہ فلسطین اور انقلاب اسلامی ایران

    اہل فلسطین کو اسرائیل جب چاہتا تھا روند دیتا تھا۔ فلسطینیوں کے پاس لڑنے کے لیے غلیل اور پتھر ہی ہوتے تھے۔ اب یہ اپنے میزائل اور راکٹ بنا رہے ہیں اور ان کے ڈرونز نے بھی تباہی مچا رکھی ہے۔ آپ کے خیال میں اہل فلسطین کو یہ اسلحہ اور یہ قوت مغرب یا خطے کے عرب ممالک نے اپنے تحفظ کے لیے دی ہے؟

    عالمی سامراج

    غزہ کی ہولناک تباہی کے مناظر اور اسرائیل نواز میڈیا کا منفی پروپیگنڈہ

    غزہ کی ہولناک تباہی کے مناظر اور اسرائیل نواز میڈیا کا منفی پروپیگنڈہ

    کتنی عجیب بات ہے ایک طرف اپنی سرزمین کے لئے لڑنے والے جانباز و مجاہدین ہیں جنکی کاروائی کو دہشت گردانہ قرار دیا جاتا ہے دوسری طرف انسانیت کے قاتل ہیں بچوں کے قاتل ہیں ، ایسے لوگ ہیں جنکے مظالم کے بارے میں ہم سوچ بھی نہیں سکتے یہ لوگ بچوں کو قتل کر تے ہیں پھر سوشل میڈیا پر تصاویر بھی وائرل کرتے ہیں۔

    بوڑھے حکمران امریکیوں کے لئے وبال جان

    بوڑھے حکمران امریکیوں کے لئے وبال جان

    یہ ایسے مسائل ہیں جن کا شکار ان کے حریف ڈونلڈ ٹرمپ بھی نظر آتے ہیں۔ سب سے زیادہ عمر رسیدہ امریکی صدر ہونے کا اعزاز ٹرمپ کو حاصل تھا جو بعد میں جوبائیڈن کو ملا۔ عام امریکی کی رائے میں امریکہ کا آنے والا صدر نوجوان ہونا چاہیئے۔ اس کے لیے قانون سازی کا بھی مطالبہ کیا جا رہا ہے۔ نئے امریکی صدر کے سامنے بہت سے چیلنج بھوت بن کر کھڑے ہوں گے۔

    کیا جعلی صہیونی ریاست ایران پر حملہ کرسکے گی؟

    کیا جعلی صہیونی ریاست ایران پر حملہ کرسکے گی؟

    صہیونی ذرائع نے کچھ عرصے سے اندرونی مسائل سے توجہ ہٹانے کے لئے بیرونی تنازعات میں شدت لانے کے لئے اقدامات پر تشہیری مہم کا آغاز کیا ہے، یہاں تک کہ آئی-12 ٹی وی چینل نے ـ امریکہ کی حمایت یا عدم حمایت کی صورت میں ـ بزعم خود، ایران کی جوہری تنصیبات اسرائیلی حملے کے منظرنامے کا جائزہ لیا ہے۔ اس منظرنامے میں اس حملے کی تفصیلات اور اس کے لئے مناسب وقت کا بھی جائزہ لیا گیا ہے۔

    اسلامی جہاد تحریک نے اعصابی جنگ سے اسرائیل کو مفلوج کر دیا
    ڈوبتی صہیونیت؛

    اسلامی جہاد تحریک نے اعصابی جنگ سے اسرائیل کو مفلوج کر دیا

    فاران تجزیاتی ویب سائٹ: مقبوضہ علاقوں کے صہیونی غاصج جنگ کے تسلسل سے تھک کر اکتا چکے ہیں اور جنگی علاقوں سے بھاگنا چاہتے ہیں۔ جہاد اسلامی تحریک (حرکۃ الجہاد الاسلامی) کا نیا ہتھیار “اعصاب کی جنگ”۔ مقبوضہ فلسطین پر قابض صہیونی ان دنوں پریشانی، خوف و ہراس اور پناہ گاہوں میں چھپنے کے لئے […]

    جمہوریت کے نام پر مداخلت

    جمہوریت کے نام پر مداخلت

    امریکہ کے انسانی حقوق کے دعووں کی طرح، واشنگٹن کا یہ دعویٰ کہ امریکہ دنیا میں جمہوریت کے حوالے سے سب سے آگے ہے، ایک فریب اور دھوکہ ہے۔ یہ ایک ایسا مسئلہ ہے، جسکا اعتراف امریکی سیاسیات کے ایک ممتاز پروفیسر نے بھی کیا ہے۔ ہارورڈ یونیورسٹی کے پروفیسر اور امریکی تھیوریسٹ اسٹیفن والٹ کہتے ہیں: ’’امریکہ اسوقت اس پوزیشن میں نہیں ہے کہ وہ اس طرح کے سربراہی اجلاس (جمہوریت کے سربراہی اجلاس) کی قیادت کرسکے۔ 2020ء کے امریکی صدارتی انتخابات سے قبل "اکنامک انٹیلی جنس یونٹ" نے اس ملک کو "خراب جمہوریت" والے ممالک کے زمرے میں رکھا تھا۔

    امریکی وزیر خزانہ کا اعتراف

    امریکی وزیر خزانہ کا اعتراف

    فاران تجزیاتی ویب سائٹ: امریکی وزیر خزانہ نے اعتراف کیا ہے کہ ایران کے خلاف واشنگٹن کی پابندیوں نے اس سے کہیں کم اپنا اثر دکھایا ہے، جتنا ہم چاہتے تھے۔ امریکی وزیر خزانہ جینیٹ یلین نے امریکی کانگریس کے ارکان کے اجلاس سے خطاب میں جو اس بات کا جائزہ لینے کے لئے منعقد […]

    صیہونی حکومت کی ریاستی دہشتگردی

    صیہونی حکومت کی ریاستی دہشتگردی

    موساد کے ہاتھوں ایران کے جوہری سائنسدانوں کا قتل ظاہر کرتا ہے کہ صیہونی اب بھی ایران کے جوہری پروگرام کا مقابلہ کرنے کے لیے ڈگن کے انداز کو موزوں سمجھتے ہیں۔

    کالم

    ایک خط کی ابلاغیاتی عکاسی: غضبناکی سے بائیکاٹ تک

    ایک خط کی ابلاغیاتی عکاسی: غضبناکی سے بائیکاٹ تک

    غزہ کے حامی امریکی طلبہ کے نام امام خامنہ ای کے خط کا ابلاغیاتی مقاطعہ خود بخود مغربی تہذیب کی ابلاغیاتی کمپنیوں ـ خاص طور پر امریکی ذرائع ابلاغ ـ کے بہت سارے حقائق کو عیاں کرتا ہے۔

    طوفان الاقصیٰ نے مغرب کے منصوبوں کو برباد کر دیا

    طوفان الاقصیٰ نے مغرب کے منصوبوں کو برباد کر دیا

    حقیقت تو یہ ہے کہ طوفان الاقصیٰ نے امریکہ اور مغربی حکومتوں کے ان تمام ناپاک عزائم اور منصوبوں کو خاک میں ملا کررکھ دیا ہے جو ایشیائی ممالک بالخصوص ایشیاء میں مسلمان ممالک کے خلاف تیار کئے گئے تھے۔فلسطینیوں نے عالمی سیاسی منظر نامہ پر ایک نیا نقش چھوڑ دیا ہے جسے آج آٹھ ماہ گزر جانے کے باجود مغربی دنیا کی حکومتیں مٹانے سے قاصر ہیں۔

    فلسطینیوں کی مزاحمت اور اس کے اثرات، دنیا حیران

    فلسطینیوں کی مزاحمت اور اس کے اثرات، دنیا حیران

    اس مزاحمت نے مشرق وسطی کے امریکی ورلڈ آڈر کو برباد کردیا ہے۔ اب ایک نیا اور زمین زادوں کا خطہ ابھرے گا۔ اس جنگ نے دنیا کی سیاسی اور سماجی اقدار کو بھی بے نقاب کیا ہے، اس سے پتہ چلا ہے کہ عام آدمی ظلم و جبر کو برداشت نہیں کرتا وہ اس کے خلاف ہوتا ہے، یہ حکمران ہوتے ہیں جو مفادات کے اسیر بن کر بے گناہوں کا قتل عام کرتے ہیں۔

    طوفان الاقصی غاصب صیہونی رژیم پر کاری ضرب

    طوفان الاقصی غاصب صیہونی رژیم پر کاری ضرب

    صیہونی حکمرانوں نے غزہ کی پٹی پر فوجی جارحیت کے بعد اعلان کیا کہ وہ تین اہم اور بنیادی اہداف کے حصول کیلئے کوشاں ہیں: الف) حماس کا مکمل خاتمہ، ب) غزہ پر فوجی قبضہ اور ج) جنگ بندی کے بغیر اسرائیلی یرغمالیوں کی آزادی۔ لیکن اب تک وہ ان میں سے ایک مقصد بھی حاصل نہیں کر پائے ہیں۔

    ایک بڑا اعتراف

    ایک بڑا اعتراف

    ایران کے حوالے سے بائیڈن کے حالیہ موقف کا سب سے بنیادی اور واضح پیغام ایران کی قابل ذکر طاقت کا اعتراف ہے۔ برسوں سے صیہونی یہ فرسودہ بیانیہ دنیا کو بیچ رہے ہیں کہ وہ مضبوط ترین فوجی اور انٹیلی جنس اداروں اور جدید ترین آلات سے مسلح ہیں۔ تاہم آپریشن وعدہ صادق کے حوالے سے بائیڈن کا حالیہ اعتراف ظاہر کرتا ہے کہ اس طرح کے دعوے کس قدر بے بنیاد ہیں۔

    مسئلہ فلسطین پر امریکی سرپرستی کا خاتمہ

    مسئلہ فلسطین پر امریکی سرپرستی کا خاتمہ

    امریکہ، جرج ڈبلیو بش کے دوران صدارت سے مسئلہ فلسطین کے حل کیلئے ایک "روڈ میپ" پیش کرتا آیا ہے جو دو، یہودی اور فلسطینی، خودمختار ریاستوں کی تشکیل پر مبنی ہے۔ لیکن اس کے باوجود ہر امریکی صدر نے، ریپبلکن پارٹی یا ڈیموکریٹک پارٹی سے وابستہ ہونے کے ناطے اس بارے میں مختلف پالیسی اپنائی ہے۔

    فلسطینی مزاحمت کو امام خمینی ؒنے زندہ کیا

    فلسطینی مزاحمت کو امام خمینی ؒنے زندہ کیا

    امام خمینی ؒ کی فکر جہاں مزاحمتی تحریکوں کی طاقت کا باعث بن رہی ہے، وہاں عوامی بیداری میں بھی امام خمینی ؒ کی وہی فکر کارفرما ہے، جو انہوں نے ہمیشہ بیان کی اور اس پر عمل کیا۔ لہذا یہ کہنا درست ہے کہ امام خمینی ؒ ایک ایسی عظیم ہستی ہیں کہ جنہوں نے فلسطینی مزاحمت کو پیدا کیا، زندہ کیا اور جلا بخشی۔

    اسلامی مناسبتیں

    امام رضا علیہ السلام کی ولادت با سعادت کی مناسبت سے رہبر انقلاب اسلامی کے اہم پیغام کے قابل غور گوشے

    امام رضا علیہ السلام کی ولادت با سعادت کی مناسبت سے رہبر انقلاب اسلامی کے اہم پیغام کے قابل غور گوشے

     رہبر انقلاب اسلامی نے امام رضا علیہ السلام کے سلسلہ  اسلامی جمہوریہ ایران کی سرزمین پر ہونے والی بین الاقوامی کانفرنس کو ایک مستحسن عمل قرار دیا اور اس بات پر زور دیا کہ’’  اس طرح کے پروگرام ہوتے رہنا چاہیے  اسلئے کہ ہم ائمہ علیہم السلام کی معرفت کے سلسلے میں کمزوریوں اور خامیوں میں مبتلا ہیں‘‘

    اختلاف امت کے حوالے سے، یہودیوں کا طعنہ اور امیرالمؤمنین علیہ السلام کا جواب

    اختلاف امت کے حوالے سے، یہودیوں کا طعنہ اور امیرالمؤمنین علیہ السلام کا جواب

    مولائے کائنات کے کلام کا مفہوم یہ ہے کہ "ہم توحید اور نبوت میں آپس میں کوئی اختلاف نہیں رکھتے جبکہ تم (یہودی) تو توحید میں ہی شک و تذبذب کا شکار ہوئے اور اپنے پیغمبر سے بھی مخالفت کی، یعنی نبوت پر بھی تمہارا کوئی یقین نہیں تھا اور ہمارے ہاں کے اختلاف اور تمہارے درمیان کے اختلاف میں بعد المشرقین ہے

    سلیمانی، مکتب لافانی

    سلیمانی، مکتب لافانی

    شہید قاسم سلیمانی نے اپنے نام کا حق ادا کیا اور خود کو ٹکڑوں میں بکھیر کر امام عصر (عج) کو سنبھال لیا۔ بلاشبہ آج ہر دل میں موجود سردار سلیمانی کی محبت جناب زہراء سلام اللہ علیہا کی ہی دعا ہے۔ شہید کی زندگی کا ہر پہلو اس بات کی گواہی دیتا ہے کہ آپ حقیقی عاشق خدا و رسول تھے۔

    شیعہ سنی اتحاد امام خمینی (رہ) کی زبانی
    ہفتہ وحدت کی مناسبت سے

    شیعہ سنی اتحاد امام خمینی (رہ) کی زبانی

    اسلام میں ہرگز شیعہ اور سنی کے درمیان تفرقہ نہیں پایا جاتا۔ شیعہ اور سنی کے درمیان تفرقہ نہیں ہونا چاہیئے۔ ہمیں وحدت کلمہ کو برقرار رکھنا چاہیئے۔ ہمارے ائمہ اطہار (ع) نے اس بات پر زور دیا ہے کہ ہم آپس میں متحد رہیں اور باہمی اتحاد کی حفاظت کریں۔ جو بھی اس اتحاد کو نقصان پہنچانے کی کوشش کرے، وہ یا تو جاہل ہے یا خاص اہداف کا حامل ہے۔

    حق پرستی کا جذبہ اور خواہش نفس

    حق پرستی کا جذبہ اور خواہش نفس

    حالیہ قرآن کریم کی اہانت کو دیکھ لیں دو طرح کے رد عمل ہمارے سامنے ہیں ایک عام مسلمانوں کا ایک کربلائی رد عمل کربلائی رد عمل ہی کی بنیاد پر ہمیں سوشل میڈیا میں یہ دیکھنے کو ملا کہ قرآن کی بے حرمتی کرنے والوں نے ہمارے مراجع کرام کو بھی نشانہ بنایا یہ اس بات کی دلیل ہے کہ وہ خود اس بات کو جانتے ہیں اگر واقعی اس دور میں قرآنی تعلیمات پر کوئی عمل پیراں ہے تو یہیں فقہا ہیں۔

    غم سید الشہداء اور حق پسند معاشرہ

    غم سید الشہداء اور حق پسند معاشرہ

    اگر یہ بات ارسطو افلاطون کے لئے کہہ سکتا ہے تو ہم سب کو بھی سمجھ میں آنا چاہیے کہ خاندان ہمارے لئے عزیز ہے لیکن حقیقت سے زیادہ نہیں ؟ قوم عزیز ہو ٹھیک ہے لیکن حقیقت سے زیادہ نہیں کوئی ادارہ عزیز ہو اچھی بات ہے لیکن ایسا نہ ہو کہ حقیقت سے زیادہ عزیز ہو جائے ، اولاد عزیز ہو ٹھیک ہے لیکن ایسا نہ ہو حقیقت سے زیادہ عزیز ہو جائے ، اس لئے کہ جہاں ہم حقیقت کی راہ سے ہٹیں گے وہیں معاشرے میں بگاڑ پیدا ہوگا ۔

    خواہشوں کے سمندر میں ڈوبتا انسان اور کشتی نجات حسینی

    خواہشوں کے سمندر میں ڈوبتا انسان اور کشتی نجات حسینی

    خواہشوں کے بپھرے سمندر کے سامنے ہمارے پاس بس ایک ہی راستہ ہے کہ خود کو کشتی نجات میں سوار کر لیں وہ کشتی جو ہماری خواہشوں کو کنڑول کر کے ہمیں ساحل توحید سے ہمکنار کردے گی اور ہماری نجات یقینی ہو جائے گی ۔

    اربعین سید الشہداء خواہشوں کی زنجیریں اور شوق پرواز

    اربعین سید الشہداء خواہشوں کی زنجیریں اور شوق پرواز

    انبیاء جو قوتوں اور صلاحیتوں کو متحرک اور منظم کرتے ہیں وہ صرف فرد کی تعمیر اور انسانی معاشرے کی تعمیر کے ایسا کرتے ہیں اور دوسرے لفظوں میں وہ انسانی سعادت وکامیابی کے لیے ہوتے ہیں، فرد کو بگاڑنا یا انسانی معاشرے کو برباد کرنا ن یہ چیز ناممکن و محال ہے ، یعنی ان یہ کوشش معاشرے اور فرد دونوں ہی کی تعمیر کے لئے ہوتی ہے خواہشوں کو ابھار کر وہ معاشرہ کو تباہ کریں ایسا محال ہے

    عاشورا؛ عزاداری کی میزان

    عاشورا؛ عزاداری کی میزان

    فاران: میزان یہ ہے کہ ہم دیکھ لیں کہ شیطان ہماری سرگرمیوں اور عزاداریوں سے خوش ہوتا ہے یا ناراض۔ طاغوت ہماری سرگرمیوں سے خوش ہوتے ہیں یا ناراض؟ عالمی استکبار کے ذرائع ابلاغ ہمارے پروگراموں سے خوش ہوتے ہیں یا نہیں؛ چنانچہ ہمیں عاشورا کو میزان و معیار قرار دینا چاہئے۔ حوزہ و جامعہ […]

    عاشورا طرز زندگی کا معیار / دیکھنا چاہئے کہ ہم حسینی ہیں یا ۔۔۔

    عاشورا طرز زندگی کا معیار / دیکھنا چاہئے کہ ہم حسینی ہیں یا ۔۔۔

    طرز زندگی ہی متعین کرتا ہے کہ کیا عالم عُقبیٰ کی طرف ہمارا انتقال امام حسین (علیہ السلام) کے انتقال کی مانند ہے یا نہیں؟

    اوپر جاؤ