کل 2569 آج 0
  • مطابق با: Sunday - 5 - February - 2023
  • صیہونی حکومت میں پھوٹ پڑنے کا امکان

    صیہونی حکومت میں پھوٹ پڑنے کا امکان

    صیہونی حکومت کے قومی سلامتی کے وزیر نے دھمکی دی ہے کہ اگر، وزیر اعظم نیتن یاہونے فلسطینیوں کے بارے میں اپنی پالیسیوں میں تبدیلی نہیں کی تو وہ چند ماہ کے اندر مستعفی ہو جائیں گے۔

    4 - فوریه - 2023

    صیہونی حکومت میں پھوٹ پڑنے کا امکان

    صیہونی حکومت کے قومی سلامتی کے وزیر نے دھمکی دی ہے کہ اگر، وزیر اعظم نیتن یاہونے فلسطینیوں کے بارے میں اپنی پالیسیوں میں تبدیلی نہیں کی تو وہ چند ماہ کے اندر مستعفی ہو جائیں گے۔

    تازہ ترین مضامین

    تلواریں نیام سے نکل چکی ہیں: تل ابیب کو فلسطینیوں کا انتباہ

    تلواریں نیام سے نکل چکی ہیں: تل ابیب کو فلسطینیوں کا انتباہ

    جہاد اسلامی فلسطین اور حماس نے صیہونیوں کو خبردار کیا ہے کہ تحریک مزاحمت تل ابیب کے جرائم کا جواب دینے اور صیہونیوں سے ہمہ گیر جنگ کے لئے مکمل طور پر تیار ہے۔

    اسرائیلی دہشت گردی کے بعد غرب اردن اور القدس میں مزاحمتی کارروائیاں

    اسرائیلی دہشت گردی کے بعد غرب اردن اور القدس میں مزاحمتی کارروائیاں

    قابض فوجیوں نے شہریوں اور ان کے گھروں پر گیس کے گولے برسائے جب کہ نوجوانوں نےقابض فوج کی دراندازی کا جواب پٹرول بموں سے حملوں اور سنگ باری سے دیا۔

    ایک جامع امریکی سازشی منصوبے کی کایا پلٹ کی مختلف جہتیں

    امریکہ، یورپ اور یہودی ریاست اور ان کے علاقائی گماشتے پوری طاقت سے میدان میں آئے اور ایران میں وسیع پیمانے پر بغاوت کے اسباب فراہم کرنے اور ایران کے اسلامی نظام کو پسپائی پر مجبور کرنے کی کوشش کی۔

    بیت المقدس میں یہودیوں کا اشتعال انگیزجلوس روکنے کی اپیل

    بیت المقدس میں یہودیوں کا اشتعال انگیزجلوس روکنے کی اپیل

    فلسطینیوں کی طرف سے یہ اپیل ایک ایسے وقت کی گئی ہے جب آباد کاروں نے کل بدھ کو باب العامود میں ریلی نکالنے کا اعلان کیا ہے۔

    جنین میں صیہونی فوجیوں کی وحشیگری کی انتہا، 9 فلسطینی شہید 16زخمی

    جنین میں صیہونی فوجیوں کی وحشیگری کی انتہا، 9 فلسطینی شہید 16زخمی

    جرائم پیشہ صیہونی فوجیوں نے اپنے تازہ ترین وحشیانہ اقدام میں جنین کیمپ پر حملہ کرکے کم سے کم نوفلسطینیوں کو شہید کردیا ہے صیہونی فوجیوں کے اس حملے میں متعدد فلسطینی زخمی بھی ہوئے ہیں

    جنین میں فلسطینیوں کے قتل عام کے بعد صیہونی فوجیوں کی پسپائی

    جنین میں فلسطینیوں کے قتل عام کے بعد صیہونی فوجیوں کی پسپائی

    غرب اردن کے شہر جنین کے کیمپ پر حملے اور فلسطینیوں کا قتل عام کرنےکے بعد صیہونی فوجیوں نے جوابی حملوں کے خوف سے پسپائی اختیار کرلی ہے

    جنین میں ایک صیہونی فوجی افسر ہلاک

    جنین میں ایک صیہونی فوجی افسر ہلاک

    فلسطینی مجاہدین نے حملہ آور صیہونی فوجیوں پر جوابی کارروائی کے دوران ایک صیہونی فوجی افسر کو موت کے گھاٹ اتاردیا

    بن سلمان کی مدد سے حجاز مقدس میں “دیارنا” کا یہودی منصوبہ!
    حجاز مقدس میں یہودی ریشہ دوانیاں:

    بن سلمان کی مدد سے حجاز مقدس میں “دیارنا” کا یہودی منصوبہ!

    سعودی سرمائے سے چلنے والا ٹی وی چینل MBC اپنے پروگرام "فی الآفاق" میں جیسن گوبرمین کی میزبانی کی ہے اور سے اپنے ناظرین کو فخریہ انداز سے بتایا کہ "سعودی حکومت اس شخص کے منصوبے دیارنا کو مالی سہولیات فراہم کر رہی ہے"۔

    اسرائیلی وزیر نے غزہ کو جنگ کی دھمکی دے دی

    اسرائیلی وزیر نے غزہ کو جنگ کی دھمکی دے دی

    فاران: اسرائیلی حکومت کی دائیں بازو اور انتہا پسند کابینہ کے داخلی سیکورٹی کے وزیر اتمر بن گویر نے کہا کہ اندازوں سے ظاہر ہوتا ہے کہ اسرائیل میں گارڈین آف دی وال- 2 کے نام سے مشہور آپریشن اور اور وہ کارروائی جس میں مئی 2021 میں صیہونی حکومت کی جانب سے فلسطینی علاقوں […]

    انٹرویو

    جنرل سلیمانی مسئلہ فلسطین پر عالم اسلام کی توجہ مرکوز کرنا چاہتے تھے
    حسین عزالدین؛

    جنرل سلیمانی مسئلہ فلسطین پر عالم اسلام کی توجہ مرکوز کرنا چاہتے تھے

    لبنانی رکن پارلیمان کا کہنا تھا: الحاج قاسم مسئلۂ فلسطین پر عالم اسلام کی توجہ مرکوز کرنا چاہتے تھے / وہ محور مقاومت (محاذ مزاحمت) کی حمایت کی راہ میں کسی بھی سرخ لکیر کو تسلیم نہیں کرتے تھے / انھوں نے شام کی جنگ میں روس کے شامل ہونے میں بنیادی کردار ادا کیا / وہ محور مقاومت کا ستون تھے / شہدائے فتح (حاج قاسم اور حاج ابو مہدی المہندس) کی حکمت عملی بدستور نافذالعمل ہے

    یہودی ریاست باکو کو اپنا دوسرا گھر سمجھتی ہے: ڈاکٹر کاظمی
    جمہوریہ آذربائیجان صہیونی مرکز!

    یہودی ریاست باکو کو اپنا دوسرا گھر سمجھتی ہے: ڈاکٹر کاظمی

    ڈاکٹر احمد کاظمی کا کہنا تھا: جمہوریہ آذربائیجان میں یہودیوں کو بسانا، صہیونی ریاست کے بنیادی مقاصد میں شامل ہے۔ اسرائیلی یہودیوں کے لئے دوسرا گھر تلاش کر رہے ہیں۔

    یہودی ریاست اپنی 80ویں سالگرہ نہیں دیکھ سکے گی / علاقے میں کوئی تبدیلی برداشت نہیں کریں گے
    جنرل بریگیڈیئر علی فدوی:

    یہودی ریاست اپنی 80ویں سالگرہ نہیں دیکھ سکے گی / علاقے میں کوئی تبدیلی برداشت نہیں کریں گے

    سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے قائم مقام کمانڈر بریگیڈیئر جنرل علی فدوی نے العالم چینل کے پروگرام "مِن طَهران" کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے کہا: امریکہ انقلاب اسلامی کے آغاز ہی سے ایران کے خلاف تمام سازشوں میں ملوث رہا ہے، جزیرہ فارسی میں امریکی میرینز کے ساتھ آمنا سامنا، اور ان کی گرفتاری کا واقعہ پہلا واقعہ نہ تھا۔ ہم 1987ع‍ میں پہلی بار امریکی جنگی بحری جہازوں سے دو دو ہاتھ کر لئے ہیں۔

    جزیرہ نمائے عرب کے شیعہ علاقوں کی افسوسناک صورت حال / شیعہ سماجی تحفظ سے محروم

    جزیرہ نمائے عرب کے شیعہ علاقوں کی افسوسناک صورت حال / شیعہ سماجی تحفظ سے محروم

    آل سعود کا دعوی ہے کہ منطقہ الشرقیہ کے شیعہ بھی ایران کے حامی ہیں، اور یہ لوگ سنیوں کو ماریں گے اور اگر ایران اور سعودیہ کے درمیان جنگ شروع ہو جائے تو یہ لوگ سعودی ریاست کے خلاف ایران کی حمایت کریں گے۔

    انسداد بدعنوانی سعودی حکومت میں بے معنی ہے

    انسداد بدعنوانی سعودی حکومت میں بے معنی ہے

    ہاں مفادات کی حکمرانی ہے؛ مغرب پر بھروسہ ناممکن ہے؛ مثلا خاشقجی کا کیس ایک سیاسی بلیک میلنگ اور سعودی عرب سے بڑی رقوم حاصل کرنے کا کیس تھا۔ روس اور یوکرین کی جنگ شروع ہونے کے بعد یورپ کو سعودی عرب کے تیل کی ضرورت پڑی چنانچہ مغرب نے خاشقجی کا کیس بند کیا اور امریکہ نے اس کیس میں ایم بی ایس کو استثنا دے دیا۔

    تعارف شخصیات

    ملٹن فریڈمان اور نیولبرل آمریت
    یہودی بھنئے؛

    ملٹن فریڈمان اور نیولبرل آمریت

    نو لبرل معیشت ایک قسم کی نو لبرل سیاسی آمریت کی معاشی بنیاد ہے، جو آزادی کے نعرے کے پیچھے چھپ کر رہتی ہے۔

    ڈیوڈ مِیدان کون ہے/ موساد کا سابق اہلکار اور خطے میں اسرائیلی دراندازی پر مامور

    ڈیوڈ مِیدان کون ہے/ موساد کا سابق اہلکار اور خطے میں اسرائیلی دراندازی پر مامور

    خطے کے ممالک میں اسرائیل کے نفوذ اور اثر و رسوخ میں ڈیوڈ مِیدان کا کردار اس قدر نمایاں تھا کہ بہت سے لوگ اسے نیتن یاہو کا اصل وزیر خارجہ کا عنوان دیتے تھے۔ بعض ذرائع نے اس کو خطے میں مصروف کار دہشت گردوں کے دادا کا لقب بھی دیا ہے۔

    ماتی کوچاوی کے پاؤں کا نشان سعودی عرب میں بھی!!!
    ماتی کوچاوی کون ہے؟ ۳

    ماتی کوچاوی کے پاؤں کا نشان سعودی عرب میں بھی!!!

    اے جی ٹی اور 4D کے ڈیزائن کردہ سسٹمز نے ٹینڈرز میں جمع کرائے گئے تین ابتدائی نمونوں میں سب سے زیادہ پوائنٹس حاصل کئے؛ لیکن اس کے باوجود یہ منصوبہ بظاہر انہيں سپرد نہیں کیا گیا۔

    ماتی کوچاوی کون ہے؟

    ماتی کوچاوی کون ہے؟

    عالمی سطح پر جدید سیکورٹی-انٹیلی جنس نظام کی تشکیل کے سالوں کے دوران ماتی کوچاوی نے اپنی توجہ ایسے شعبے پر مرکوز کرلی جس نے 11 ستمبر کے واقعے کے بعد تیزی سے فروغ پایا اور آج یہ شعبہ بڑی اور چھوٹی طاقتوں کے مقابلے کا میدان بن چکا ہے: سائبر اسپیس۔

    ماتی کوچاوی کون ہے؟ امارات کا پسندیدہ شخص اور اسرائیل کے جاسوسی آلات کا گاڈ فادر

    ماتی کوچاوی کون ہے؟ امارات کا پسندیدہ شخص اور اسرائیل کے جاسوسی آلات کا گاڈ فادر

    امارات کی طرف اشارہ اس لئے ہے کہ ابو ظہبی میں آل نہیان قبیلے کی آمرانہ بادشاہت اسرائیلی سائبر آلات اور سائبر حکمت عملیوں کی سب سے بڑی صارف ہے اور غاصب اسرائیلی ریاست میں سائبر ٹیکنالوجی کے تمام اہم افراد کا اس عربی ریاست کے ساتھ کام کر رہے ہیں۔

    تعارف مراکز

    لاجک اینڈ انڈسٹریز: جاسوسی ادارے کے انجنیئر اور سپائی ویئر کی تیاری

    لاجک اینڈ انڈسٹریز: جاسوسی ادارے کے انجنیئر اور سپائی ویئر کی تیاری

    ہ بتانا ضروری ہے کہ یہ تمام اقدامات امارات اور غاصب ریاست کے درمیان تعلقات کے باضابطہ اعلان سے کئی برس پہلے عمل میں لائے گئے ہیں، اور اسی بنا پر کوچاوی وہ پہلا اسرائیلی شخص سمجھا جاتا ہے جس نے خلیج فارس کے علاقے - بطور خاص متحدہ عرب امارات - میں ریشہ دوانی کی ہے اور اپنے لئے مضبوط پوزیشن کا انتظام کیا ہے۔

    حفاظتی سلوشنز کی 4D کمپنی کا قیام
    ماتی کوچاوی کون ہے؟ ۲

    حفاظتی سلوشنز کی 4D کمپنی کا قیام

    ایک سو (100) سے بھی زیادہ ڈاکٹر اور ماہر انجنیئر اس مجموعے کے مشینی امور، مصنوعی ذہانت اور اشیاء کا انٹرنیٹ میں کام کر رہے ہیں؛ اور سینسرز سے حاصل ہونے والی معلومات کے پراسیسنگ اور تجزیئے میں مصروف ہیں تا کہ فزیکی ماحولیات کو قابل فہم بنا دیں۔

    امریکی صہیونی تنظیم (ZOA) کا تعارف

    امریکی صہیونی تنظیم (ZOA) کا تعارف

    امریکی صہیونی تنظیم صرف صہیونی ریاست کے تحفظ کے لیے کام کرتی اور اس راہ میں پائے جانے والی ہر رکاوٹ کو دور کرنے کی کوشش کرتی ہے اس تنظیم کی ایک اہم سرگرمی اسرائیل پر حاکم نظام کی حمایت کے لیے دوسرے ممالک کے حکمرانوں میں نفوذ پیدا کرنا ہے۔

    الخلیل کی ۸ صدیاں پرانی تاریخی مسجد علی البکاء کا تعارف

    الخلیل کی ۸ صدیاں پرانی تاریخی مسجد علی البکاء کا تعارف

    مسجد علی البکاء کی تاریخ ۸ صدیاں پرانی ہے۔ اس کے اطراف میں یہودی کالونیوں کی تعداد میں اضافے کے باوجود آج بھی اس کے گنبد و مینار سے اذان کی صدا گونجتی سنی جا سکتی ہے۔

    یہودی تھنک ٹینک آئی این ایس ایس (INSS) کا تعارف

    یہودی تھنک ٹینک آئی این ایس ایس (INSS) کا تعارف

    ادارہ "آئی این ایس ایس" سلامتی، دہشت گردی اور عسکری امور پر متعدد مقالات اور کتابیں انگریزی اور عبرانی زبانوں میں شائع کرتا ہے۔ ان میں ہی میں سے ایک اہم تحقیقی مقالہ ایران کے میزائل سسٹم کے بارے میں ہے جس کا عنوان "ایران کا میزائل سسٹم: بنیادی تسدیدی اوزار" ہے۔

    تعارف کتب

    جو کچھ اسرائیلی امریکی یہودیوں کے بارے میں سوچتے ہیں

    جو کچھ اسرائیلی امریکی یہودیوں کے بارے میں سوچتے ہیں

    جو چیز قارئین کو اس کتاب کے مطالعہ کے لیے ترغیب دلاتی ہے وہ یہ ہے کہ “میٹی گولن” ایک متعصب اسرائیلی یہودی ہے اور اس کے برخلاف جو اکثر لوگ تصور کرتے ہیں کہ امریکہ اور اسرائیل کے یہودیوں کے باہمی تعلقات بہت اچھے ہیں یا دوسرے لفظوں میں ان ملکوں کے روابط جیسا کہ میڈیا دکھاتا ہے اندرونی طور پر بھی ویسے ہی دوستانہ ہیں، اس کتاب میں ان کے درمیان پائی جانے والی دراڑوں سے پردہ ہٹایا گیا ہے۔

    کتاب “یاسر عرفات مجاہدت سے مذاکرات تک” کا تعارف

    کتاب “یاسر عرفات مجاہدت سے مذاکرات تک” کا تعارف

    یاسر عرفات اس کے باوجود کہ ایک فعال، ایکٹو اور فلسطینی مقاصد کے تئیں جذباتی شخص تھے، ایک مغرور سیاست دان اور اپنے گرد و نواح میں رہنے والوں کے اوپر بھرسہ نہ کرنے والے شخص بھی تھے۔ التبہ ان کی یہ خصوصیات کسی حد تک فلسطینی مقاصد کی راہ میں کی جانی والی مجاہدت میں اخلاص کے منافی تھیں۔

    کتاب “22 روزہ جنگ” کا تعارف

    کتاب “22 روزہ جنگ” کا تعارف

    کتاب کا مقدمہ جنگ کے کلی پہلووں جیسے صہیونی حکومت کی جنایت و تعدی، صہیونی ظلم و جنایت کا بین الاقوامی انعکاس ،غزہ کی پائداری و مزاحمت اور مظلومیت وغیرہ کو بیان کر رہا ہے ۔

    تعارف کتاب “اسرائیل کی سوق الجیشی اہمیت اور اسکے اطراف و اکناف کا جائزہ”

    تعارف کتاب “اسرائیل کی سوق الجیشی اہمیت اور اسکے اطراف و اکناف کا جائزہ”

    یہ قیمتی کتاب، ایک مقدمہ، ایک پیش لفظ اور کلی عناوین کے تحت سات فصلوں پر مشتمل ہے، مصنف نے اسی طرح کتاب کے اختتام میں ضمیمہ کے عنوان سے ایک حصہ مخصوص کیا ہے جس میں اسرائیل کی موساد اور ایرانی شہنشاہیت کی خفیہ ایجنسی ساواک کے درمیان خفیہ اطلاعات، سیاسی اور اقتصادی مشترکہ تعاون کو بیان کیا گیا ہے ۔

    کتاب ‘یہودی قوم کیسے بنی؟’ کا تعارف

    کتاب ‘یہودی قوم کیسے بنی؟’ کا تعارف

    یہ کتاب تاریخ کے بارے میں ایک کاوش ہے، جس کا آغاز چند ذاتی داستانوں سے ہوتا ہے۔ مصنف اس کتاب کی سطور میں پہلی صدی عیسوی میں رومیوں کے ہاتھوں یہودیوں کی جبری جلاوطنی کے افسانے پر بطلان کی لکیر کھینچے ہیں اور کہتے ہیں کہ موجودہ زمانے کے یہودی ان نومذہب یہودیوں کی اولاد میں سے ہیں جن کی جنم بومیاں مشرق وسطی اور مشرقی یورپ میں پھیلی ہوئی ہیں۔

    مسلم دنیا

    دریائے اردن کے مغربی کنارے، قدس اور جنین میں فلسطینی یونٹوں کی بے پناہ کاروائیاں
    ڈوبتی ہوئی غاصب ریاست؛

    دریائے اردن کے مغربی کنارے، قدس اور جنین میں فلسطینی یونٹوں کی بے پناہ کاروائیاں

    فلسطینی مقاومت کے 21 سالہ نوجوان "خیر اللقم" نے مقبوضہ قدس شریف کے قصبے "نبی یعقوب" میں غاصب یہودی ریاست کی بنیادوں پر لرزہ طاری کردیا۔

    ایک جامع امریکی سازشی منصوبے کی کایا پلٹ کی مختلف جہتیں

    ایک جامع امریکی سازشی منصوبے کی کایا پلٹ کی مختلف جہتیں

    ایرانی قوم اور رہبر معظم امام سید علی خامنہ ای (دام ظلہ العالی) نے وقار و عظمت کے ساتھ اس شیطانی لہر پر غلبہ پایا؛ المختصر "دشمنوں کو ناکام بنانے کے لئے ایران کا عزم، ہمیشہ کی طرح، اس عزم کو توڑنے پر مرکوز ہونے والے مغربی ارادے سے زیادہ محکم اور قوی تھا"۔

    بن سلمان کی مدد سے حجاز مقدس میں “دیارنا” کا یہودی منصوبہ!
    حجاز مقدس میں یہودی ریشہ دوانیاں:

    بن سلمان کی مدد سے حجاز مقدس میں “دیارنا” کا یہودی منصوبہ!

    سعودی سرمائے سے چلنے والا ٹی وی چینل MBC اپنے پروگرام "فی الآفاق" میں جیسن گوبرمین کی میزبانی کی ہے اور سے اپنے ناظرین کو فخریہ انداز سے بتایا کہ "سعودی حکومت اس شخص کے منصوبے دیارنا کو مالی سہولیات فراہم کر رہی ہے"۔

    بن سلمان کی مدد سے حجاز مقدس میں یہودی منصوبہ! خیبر میں سیاحتی مرکز!
    حجاز مقدس میں یہودی ریشہ دوانیاں:

    بن سلمان کی مدد سے حجاز مقدس میں یہودی منصوبہ! خیبر میں سیاحتی مرکز!

    سعودی ولی عہد محمد بن سلمان سیاحت کو رونق دینے کے بہانے اور یہودی ریاست کے ساتھ تعلقات کی بحالی کا امکان فراہم کرنے کے مقصد سے، مدینہ منورہ کی حدود میں واقع مشہور زمانہ "خیبر" کے علاقے میں یہودیوں کو دوبارہ آنے کے مواقع فراہم کر رہے ہیں۔

    امریکہ بے آبرو ہو کر خطے سے بھاگ جائے گا / یہودی ریاست ٹوٹ رہی ہے
    بریگیڈیئر جنرل قا آنی؛

    امریکہ بے آبرو ہو کر خطے سے بھاگ جائے گا / یہودی ریاست ٹوٹ رہی ہے

    شہید لیفٹننٹ جنرل الحاج قاسم سلیمانی کے جانشین اور سپاہ قدس کے کمانڈر بریگیڈیئر جنرل الحاج اسماعیل قا آنی نے کہا ہے کہ امریکہ ذلت و خفت کے ساتھ خطے سے بھاگ جائے گا اور سابق سوویت اتحاد کے انجام سے دوچار ہو جائے گا؛ یہ وہ حقیقت ہے کہ امریکہ کے اپنے تحقیقی ادارے بھی اس کی تصدیق کر رہے ہیں۔

    تہذیبوں کا ٹکراو اور اسلام کی نرم طاقت

    تہذیبوں کا ٹکراو اور اسلام کی نرم طاقت

    یہ حقیقت روز روشن کی طرح عیاں ہے کہ ایران میں رونما ہونے والے اسلامی انقلاب کے مقابلے میں مغربی طاقتیں پوری طرح شکست کا شکار ہو چکی ہیں جبکہ وہ اپنی شکست قبول کرنے پر بھی تیار نہیں ہیں جس کے نتیجے میں گھٹیا اور پست حرکتوں پر اتر آئی ہیں اور اپنے ہرکاروں کو اسلام اور اسلامی شخصیات کے خلاف ہرزہ سرائی کا مشن سونپ چکی ہیں۔ اس کا واحد راہ حل اور دشمن کو دشمنی جاری رکھنے سے باز رکھنے اور مکمل طور پر مایوس کرنے کا واحد راستہ اسلامی دنیا کا مزید طاقتور ہونا ہے۔

    جمہوریہ آذربائیجان اور یہودی ریاست کے تعلقات؛ جائزہ رپورٹ

    جمہوریہ آذربائیجان اور یہودی ریاست کے تعلقات؛ جائزہ رپورٹ

    "قفقاز کے علاقے میں، آذربائیجان اور صہیونی ریاست کے تعلقات، اسلامی جمہوریہ ایران [اور بقیہ اسلامی ممالک] کے لئے اہم ہیں۔ یہ تعلقات سیاسی، سفارتی، ثقافتی اور فنکارانہ بھی ہیں اور تعلیم و تربیت کے میدان میں بھی: آذربائیجانی اسکولوں اور جامعات میں یہودیوں کا بڑھتا ہؤا اثر و رسوخ اور یہودی تعلیمی مراکز کا قیام، اسی تناظر میں دیکھا جا سکتا ہے۔

    عالمی سامراج

    اختتام پذیر ہوتی جعلی رژیم

    اختتام پذیر ہوتی جعلی رژیم

    نیتن یاہو خود بھی نااہل ہو کر وزیراعظم کا عہدہ گنوا بیٹھنے کے خطرے سے روبرو ہیں۔ عبری زبان چینل کان کے مطابق اٹارنی جنرل کا دفتر بنجمن نیتن یاہو کو نااہل قرار دینے کیلئے اقدامات شروع کرنے کا فیصلہ کر چکا ہے۔

    دشمن کے جامع منصوبے کی ناکامی

    دشمن کے جامع منصوبے کی ناکامی

    دشمن ایرانیوں کی خصوصی صلاحیتوں سے غافل رہا یا اگر ان پر توجہ بھی دی تو ان کا مقابلہ کرنے کیلئے اس کے پاس کوئی راستہ نہیں تھا۔ ایرانی قوم وہی قوم ہے جس نے گذشتہ 150 برس میں مغربی تسلط کے خلاف مسلسل تحریکیں چلائی ہیں۔

    فرانسیسی حکومت اور ریاستی اسلاموفوبیا

    فرانسیسی حکومت اور ریاستی اسلاموفوبیا

    مغرب نے ایک طرف تکفیری دہشت گردی کی بنیاد رکھی اور اسلام کا بدنما چہرہ دکھانے کیلئے ہمیشہ اس کی ترویج کی جبکہ دوسری طرف سرکاری طور پر قومی شدت پسندی اور اسلاموفوبیا کو فروغ دیا ہے۔ تکفیری دہشت گردی اور نسل پرستانہ اسلاموفوبیا کے درمیان دوطرفہ تعاون ایک ہی مرکز یعنی امریکہ اور یورپ (خاص طور پر فرانس کی انٹیلی جنس ایجنسیز اور سیاسی اداروں) کی جانب سے کنٹرول کیا جا رہا ہے۔

    روزانہ ہزاروں انسانوں کی جان لینے والے حیاتیاتی ہتھیار؛ ایک جائزہ
    یہودی اور حیاتیاتی جنگ؛

    روزانہ ہزاروں انسانوں کی جان لینے والے حیاتیاتی ہتھیار؛ ایک جائزہ

    حیاتیاتی ہتھیاروں کا استعمال سب سے پہلے رومیوں نے کیا جو دشمن کے آبی ذخائر کو آلودہ کرنے کے لئے ان میں مردہ جانور پھینکتے تھے؛ جس کی وجہ سے دشمن کی افرادی قوت میں کمی آتی تھی اور جنگجؤوں کے حوصلے گر جاتے تھے۔ دوسری مثال منگولوں کی ہے جو طاعون زدہ جانوروں کے لاشے منجنیق کے ذریعے جزیرہ کریمیا میں پھینکتے تھے۔ کچھ مؤرخین کا کہنا ہے کہ منگولوں کا یہ اقدام قرون وسطی میں یورپ میں طاعون پھیلنے کا سبب بنا اور ڈھائی کروڑ یورپی مارے گئے۔

    امریکہ چاہے بھی تو بے وقوفی سے باز نہیں آ سکتا

    امریکہ چاہے بھی تو بے وقوفی سے باز نہیں آ سکتا

    مشہور امریکی سیاسی ماہر اور ہارورڈ یونیورسٹی میں بین الاقوامی تعلقات کے پروفیسر سٹیفن والٹ (Stephen M. Walt) نے استدلال کیا ہے کہ لبرلزم کے اصولوں کے نفاذ پر امریکی حکومت کا اصرار، اس مسئلے کا سبب بن رہا ہے کہ وہ بین الاقوامی سطح پر اپنی غلطیوں سے کبھی بھی سبق حاصل نہ کرسکے؛ اور مسلسل خطاؤں کا ارتکاب کرتی رہے۔ انھوں نے اپنے مضمون کا عنوان "امریکہ چاہے بھی تو بے وقوفی سے باز نہیں آ سکتا" (The United States Couldn't Stop Being Stupid if It Wanted) قرار دیا ہے۔

    امریکہ کے تزویراتی اتحادیوں کا مشرق کی طرف رجحان
    مغرب کا زوال؛

    امریکہ کے تزویراتی اتحادیوں کا مشرق کی طرف رجحان

    چین کے دورہ ریاض اور ریاض-ماسکو کے درمیان سیاسی ہم آہنگی سے ظاہر ہوتا ہے کہ امریکہ اپنے حسابات میں غلطیاں کرکے اپنے مغربی ایشیائی اتحادیوں کو، مشرق کے ساتھ مقابلے میں، کھو چکا ہے۔

    امریکہ کے جنگی کھیل میں یورپ کی ہار

    امریکہ کے جنگی کھیل میں یورپ کی ہار

    امریکہ کی جانب سے روس کے ساتھ تعلقات کی سطح کم کرنے، اسلحہ کی تجارت محدود کرنے یا روس کو انرجی کی محصولات سے حاصل ہونے والی آمدنی کو کم کرنے نیز زبردستی قیمتوں کا تعین کرنے کیلئے جو کوششیں انجام پا رہی ہیں ان کا ایک ہی مقصد ہے اور وہ روس سے متعلق اسٹریٹجک اہداف کا حصول ہے۔

    کالم

    صہیونیت کی شکست و ریخت؛ اسرائیل کے وجود پر شکستگی کی کیفیت طاری
    ڈوبتی ہوئی صہیونیت؛

    صہیونیت کی شکست و ریخت؛ اسرائیل کے وجود پر شکستگی کی کیفیت طاری

    مقبوضہ فلسطین میں خانہ جنگی کا ماحول، صہیونیت کو درپیش شناختی چیلنج، ایک قوم کی تشیل میں "اسرائیل" کہلوانے والی ریاست کی شکست فاش اور تل ابیب میں سیاستدانوں کے درمیان جنگ صہیونی یہودی ریاست کی شکست و ریخت کے اصل اسباب ہیں؛ ایسی ریاست جو تجزیہ نگاروں کے بقول اس وقت "خود شکستگی" (Self-Destruction) کے مرحلے سے گذر رہی ہے۔

    ایک جامع امریکی سازشی منصوبے کی کایا پلٹ کی مختلف جہتیں

    امریکہ، یورپ اور یہودی ریاست اور ان کے علاقائی گماشتے پوری طاقت سے میدان میں آئے اور ایران میں وسیع پیمانے پر بغاوت کے اسباب فراہم کرنے اور ایران کے اسلامی نظام کو پسپائی پر مجبور کرنے کی کوشش کی۔

    بن سلمان کی مدد سے حجاز مقدس میں یہودی منصوبہ! خیبر میں سیاحتی مرکز!
    حجاز مقدس میں یہودی ریشہ دوانیاں:

    بن سلمان کی مدد سے حجاز مقدس میں یہودی منصوبہ! خیبر میں سیاحتی مرکز!

    سعودی ولی عہد محمد بن سلمان سیاحت کو رونق دینے کے بہانے اور یہودی ریاست کے ساتھ تعلقات کی بحالی کا امکان فراہم کرنے کے مقصد سے، مدینہ منورہ کی حدود میں واقع مشہور زمانہ "خیبر" کے علاقے میں یہودیوں کو دوبارہ آنے کے مواقع فراہم کر رہے ہیں۔

    مقبوضہ علاقوں سے اسرائیلیوں کا فرار

    مقبوضہ علاقوں سے اسرائیلیوں کا فرار

    ایک اور عنصر صیہونی فوج کی کسی بھی ممکنہ جنگ میں صیہونی حکومت کو تحفظ فراہم کرنے کی صلاحیت پر عدم اعتماد کا بڑھتا ہوا احساس ہے، خاص طور پر جب سے اسرائیل کے دشمنوں نے اپنی ڈیٹرنس پاور میں اضافہ کیا ہے، صیہونی فوج بے بس نظر آرہی ہے۔

    اسراف، عریانیت و بے حجابی کے مقابل ہماری معاشرتی ذمہ داری

    اسراف، عریانیت و بے حجابی کے مقابل ہماری معاشرتی ذمہ داری

    کتنے افسوس کی بات ہے کہ بعض شادیوں میں دوسرے مذاہب و اقوام کے لوگ بھی آتے ہیں جب وہ لوگ ہماری شادیوں میں شریک ہوتے ہوں گے بعض محفلوں میں عریانیت و بے حجابی کودیکھتے ہوں گے تو کیا تصور لے کر جاتے ہوں گے ہمارے دین کے بارے میں ؟ کیا رائے قائم کرتے ہوں گے ہمارے مذہب کے بارے میں ؟ وہ بھی اس دور میں جہاں حجاب کو نشانہ بنایا جا رہا ہے ؟

    روزانہ ہزاروں انسانوں کی جان لینے والے حیاتیاتی ہتھیار؛ ایک جائزہ
    یہودی اور حیاتیاتی جنگ؛

    روزانہ ہزاروں انسانوں کی جان لینے والے حیاتیاتی ہتھیار؛ ایک جائزہ

    حیاتیاتی ہتھیاروں کا استعمال سب سے پہلے رومیوں نے کیا جو دشمن کے آبی ذخائر کو آلودہ کرنے کے لئے ان میں مردہ جانور پھینکتے تھے؛ جس کی وجہ سے دشمن کی افرادی قوت میں کمی آتی تھی اور جنگجؤوں کے حوصلے گر جاتے تھے۔ دوسری مثال منگولوں کی ہے جو طاعون زدہ جانوروں کے لاشے منجنیق کے ذریعے جزیرہ کریمیا میں پھینکتے تھے۔ کچھ مؤرخین کا کہنا ہے کہ منگولوں کا یہ اقدام قرون وسطی میں یورپ میں طاعون پھیلنے کا سبب بنا اور ڈھائی کروڑ یورپی مارے گئے۔

    امریکہ چاہے بھی تو بے وقوفی سے باز نہیں آ سکتا

    امریکہ چاہے بھی تو بے وقوفی سے باز نہیں آ سکتا

    مشہور امریکی سیاسی ماہر اور ہارورڈ یونیورسٹی میں بین الاقوامی تعلقات کے پروفیسر سٹیفن والٹ (Stephen M. Walt) نے استدلال کیا ہے کہ لبرلزم کے اصولوں کے نفاذ پر امریکی حکومت کا اصرار، اس مسئلے کا سبب بن رہا ہے کہ وہ بین الاقوامی سطح پر اپنی غلطیوں سے کبھی بھی سبق حاصل نہ کرسکے؛ اور مسلسل خطاؤں کا ارتکاب کرتی رہے۔ انھوں نے اپنے مضمون کا عنوان "امریکہ چاہے بھی تو بے وقوفی سے باز نہیں آ سکتا" (The United States Couldn't Stop Being Stupid if It Wanted) قرار دیا ہے۔

    اسلامی مناسبتیں

    فاطمی طرز حیات  اور حیات طیبہ کا باہمی ربط اور ہم

    فاطمی طرز حیات  اور حیات طیبہ کا باہمی ربط اور ہم

    قرآن نے انسانی زندگی کے لئے ایک خاص طرز و روش کو پیش کیا ہے جسے حیات طیبہ کہہ کر یاد کیا ہے  تاکہ انسان اس پاکیزہ حیات کے ذریعہ  اپنے رب سے نزدیک ہو سکے اور اسکے صفات کا مظہر قرار پا سکے ۔

     معاشرے و ملک کے موجودہ حالات اور فاطمی طرز زندگی پر توجہ کی ضرورت

     معاشرے و ملک کے موجودہ حالات اور فاطمی طرز زندگی پر توجہ کی ضرورت

    فاران تجزیاتی ویب سائٹ: آج ہم جس ملک اور جس معاشرے میں جی رہی ہیں وہاں زندگی سے جڑے ان گنت ایسے مسائل ہیں جو لا ینحل نظر آتے ہیں اور ہر دن کے سورج  کے طلوع ہونے کے ساتھ ساتھ ان لاینحل مسائل کے ڈھیر میں اضافہ ہی ہوتا جا رہا ہے، ایک طرف خود […]

    امام خمینی رضوان اللہ تعالی اور ثقافتی یلغار سے مقابلہ

    امام خمینی رضوان اللہ تعالی اور ثقافتی یلغار سے مقابلہ

    امام خمینی رضوان اللہ تعالی علیہ کا نظریہ تھا ’’ کسی بھی قوم کی سعادت کا سرچشمہ اسکا فرہنگ ہے کسی بھی قوم کی بدبختی کی پہچان بھی اسکا کلچر ہے ‘‘۔

    حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی نرم خوئی اور ہماری ذمہ داری

    حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی نرم خوئی اور ہماری ذمہ داری

    فاران تجزیاتی ویب سایٹ: آج ہمارے ملک میں ہر سو عدم برداشت کی فضا ہے ، ایک طرف کچھ نفرت کے پجاری مسلمانوں کے خلاف مسلسل زہر اگل رہے ہیں تو دوسری طرف معاشرے میں غلط طرز اصلاح اور درشتی و سختی کی بنا پر ہم روز بروز دوستوں اور اپنوں کا حلقہ از خود […]

    ہم امام حسین علیہ السلام کی ملت ہیں
    بسلسلۂ اربعین حسینی(ع)؛

    ہم امام حسین علیہ السلام کی ملت ہیں

    رہبر انقلاب اسلامی نے حال ہی میں پوری دنیا سے آئے ہوئے عالمی اہل بیت(ع) اسمبلی کی مجلس عمومی کے اراکین سے خطاب کرتے ہوئے فرمایا: "پیروان اہل بیت(ع) کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ انھوں نے استکبار کے سات سروں والے اژدہے کو پیچھے دھکیل دیا اور ان منصوبوں کو خاک میں ملا دیا"۔

    امام حسین علیہ السلام اور معاشرے کے کمزور و نادار لوگ

    امام حسین علیہ السلام اور معاشرے کے کمزور و نادار لوگ

    فرش عزا محض ہمیں غم منانا نہیں سکھاتا بلکہ اس غم کے سایے میں معاشرے کی تعمیر کا ہنر بھی سکھاتا ہے اب یہ ہمارے اوپر ہے کہ ہم سماجی مسائل میں  کس انداز سے دلچسپی لے رہے ہیں  کتنا توجہ معاشرے میں کمزور و ضعیف طبقے پر ہماری ہے اور کتنا محض کچھ مجالس منعقد کر کے ہم مطمئن ہیں کہ ہم نے غم منا لیا۔ 

    کیا ہمیں عزاداری کی مجالس میں شہادت کے واقعات ناز و انداز کے ساتھ بیان کرنا چاہئے؟

    کیا ہمیں عزاداری کی مجالس میں شہادت کے واقعات ناز و انداز کے ساتھ بیان کرنا چاہئے؟

    امر مسلّم یہ ہے کہ ہر وہ پالیسی اور ہر وہ عمل جس سے اپنوں کو فائدہ اور دشمن کو نقصان نہ پہنچے، آج کے حساس زمانے میں اس سے دشمن کو فائدہ اور اپنوں کو نقصان پہنچتا ہے اور یوں یہ حضرات بھی اسلام اور تشیّع کے حلفیہ دشمنوں کی صف میں کھڑے نظر آتے ہیں،

    انسانی زندگی کے تین بڑے سرمایے اور غم سید الشہداء علیہ السلام

    انسانی زندگی کے تین بڑے سرمایے اور غم سید الشہداء علیہ السلام

    مجالس سید الشہداء سے بڑھ کر اور کونسی جگہ ہے جہاں پر احیاء امر اہلبیت اطہار علیھم السلام ہوتا ہو ، یہ ایام عزا ہی کی برکت ہے کہ ہم حق کے آئینہ پر پڑی گرد کو ان ایام میں صاف کرتے ہیں ، باطل کے چہرے سے نقاب نوچی جاتی ہے۔

    خدمت خلق اور تعلیمات حضرت سید الشہداء علیہ السلام

    خدمت خلق اور تعلیمات حضرت سید الشہداء علیہ السلام

    یہ ہمارے اس امام کا کردار جس پر ہم گریہ کرتے ہیں روتے ہیں جس کے مصائب پر آنسو بہاتے ہیں لیکن ہم میں سے بہت کم ایسے لوگ ہیں جو اس امام مظلوم کی شخصیت سے واقف ہوں اس کے فضائل سے آشنا ہوں ، ایام عزا میں ہماری ذمہ داری ہے کہ اس شخصیت کے ان پنہاں گوشوں کو لوگوں کے سامنے لائیں جن میں فضائل و کمالات کا ایک لا متاہی سمندر ٹھاٹھیں مار رہا ہے ۔

    اوپر جاؤ